روس اور یوکرین میں اناج کی برآمدات کے لیے معاہدہ

روس اور یوکرین نے اناج کی برآمدات کے لیے یوکرائنی بحیرہ اسود کی بندرگاہوں کو دوبارہ کھولنے کے لیے ایک تاریخی معاہدے پر دستخط کردیے،امید ہے کہ روسی حملے سے پیدا ہونے والے بین الاقوامی خوراک کے بحران کو کم کیا جا سکتا ہے۔

غیرملکی خبرایجنسی کے مطابق یہ معاہدہ اقوام متحدہ اور ترکی کی ثالثی میں ہونے والی دو ماہ کی بات چیت کا تاج ہے جس کا مقصد اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹیریس نے ایک “پیکیج” کا نام دیا جو ماسکو پر سخت مغربی پابندیوں کے باوجود روسی اناج اور کھاد کی ترسیل کو کم کرتے ہوئے یوکرائنی اناج کی برآمدات کو بحال کرے گا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More