متحدہ اپوزیشن نے مشترکہ اجلاس میں پاس قوانین مسترد کردیئے

اسلام آباد: متحدہ اپوزیشن نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے پاس کئے گئے قوانین کو مسترد کرتے ہوئے ہر فورم پر آواز اٹھانے کا اعلان کردیا ۔مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر پرجانبداری کا الزام عائد کرتےہوئے کہا کہ پاکستان کی پارلیمانی تاریخ میں اتنا کمزور اور جانبدارسپیکر نہیں دیکھا ۔

متحدہ اپوزیشن کے رہنماؤں احسن اقبال ،شیری رحمان،شاہدہ اخترعلی، سینیٹر شفیق ترین اور مریم اورنگزیب نے مشترکہ پریس کانفرنس کی ۔ لیگی رہنما احسن اقبال نے اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر پر جانبداری کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے الیکٹرانک ووٹنک مشین اسٹیب بینک آف پاکستان اور کلبھوشن یادیو سے متعلق بل کی منظوری کی مذمت کرتےہوئے مسترد کردیا۔

پیپلزپارٹی کی رہنما شیری رحمان نے کہا کہ ‏گزشتہ روز پارلیمنٹ کو مفلوج کیا گیا۔ حکومت کی ساری باتیں بدنیتی پر مبنی تھیں۔ ان سے نہ ملک چل رہا ہے اور نہ ان کی کوئی خارجہ پالیسی ۔ہم میدان میں آگئے ہیں ہر فورم استعمال کریں۔

جے یو آئی ایف کی رہنما شاہدہ اخترعلی نے کہا کہ کل ایوان کو بے توقیر کیا گیا ہے جو پاکستان کی تاریخ کا سیاہ ترین باب ہے۔ اسپیکر قومی اسمبلی قوانین کی خلاف ورزیاں کررہے تھے جبکہ پختونخواہ ملی عوامی پارٹی کے سینٹرشفیق ترین نے بھی پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے پاس ہونے والوں بلوں کی شدیدالفاظ میں مذمت کی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More