وزیراعظم ریلیف نہیں بلکہ مہنگائی پیکیج بنانے میں مصروف ہیں، شیری رحمان

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کی نائب صدر سینیٹر شیری رحمان نے کہا ہے کہ حکومت آئی ایم ایف کے کہنے پر پیٹرول، بجلی اور گیس کی قیمتوں میں ناقابل برداشت اضافہ کرنے جا رہی ہے۔

پی پی رہنما شیری رحمان نے کہا کہ وزیراعظم نے ریلیف پیکج کا اعلان کیا تھا لیکن آج کل حکومت مہنگائی پیکیج بنانے میں مصروف ہے۔ حکومت بجلی پر سبسڈی ختم کرکے نرخوں میں اضافہ کرے گی۔قیمتوں میں اضافے کے علاوہ پیٹرول لیوی کی مد میں 610 ارب روپے کا اضافی بوجھ عوام پر ڈالا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ تباہی سرکار تین سال میں گیس کی قیمتوں میں پہلے ہی 350 فیصد کا اضافہ کر چکی ہے اور اب آئی ایم ایف کے حکم پر گیس فی ایم ایم بی ٹی یونٹ پر 400 روپے کا مزید اضافہ کررہی ہے ۔‏سردیوں میں لوگ گیس سے محروم ہیں۔ یہ ملک کو پتھر کے زمانے کی طرف لے کر جا رہے ہیں۔

سینیٹر شیری رحمان نے مزید کہا کہ نااہل اور ناکام حکومت کے پاس عوام کو ریلیف دینے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے ۔ یہ حکومت آئے روز غیر اعلانیہ منی بجٹ پیش کر رہی ہے ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More