عوام نے انتشار پھیلانے والے کی سیاست مسترد کر دیا، مریم اورنگزیب

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات مریم اورنگزیب نے کہاہے کہ مسلح جتھے نے انتشار اور فساد پھیلانے کی کوشش کی۔ عوام نے فساد اور انتشار پھیلانے والے کی سیاست کو مسترد کر دیا۔

وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان نے 2014ء میں بھی پارلیمنٹ پر حملہ کیا، سول نافرمانی کی تحریک چلائی، پی ٹی وی پر حملہ کیا، بل جلائے، اس وقت کے وزیراعظم کے خلاف نعرے لگائے، سپریم کورٹ کے باہر گندے کپڑے لگائے، پاکستان کے عوام نے اس وقت یہ تمام مناظر دیکھے، آج ایک بار پھر اس جتھے نے خونی مارچ کا اعلان کیا، مسلح جتھے نے انتشار اور فساد پھیلانے کی کوشش کی۔

وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ عوام کو مبارکباد پیش کرتی ہوں، آج سیاست سے لشکر کشی کا خاتمہ ہو چکا ہے، اب کوئی بھی جتھے بنا کر پارلیمان اور ریاست پر حملہ نہیں کر سکتا۔

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ ایک شخص صرف اپنی ضد، تکبر، فساد، انتشار اور فتنہ پھیلانے کی سوچ سے پورے پاکستان کو یرغمال بنانے کی خواہش رکھتا تھا، آج پاکستان کے عوام نے اسے مسترد کر دیا ہے، 2014ء میں جب چین کے صدر پاکستان کا دورہ کر رہے تھے اور سی پیک کا منصوبہ آ رہا تھا، اس وقت کے وزیراعظم ملک کو ترقی، مہنگائی میں کمی، لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کیلئے دن رات کام کر رہا تھا تو یہ شخص اس وقت بھی کنٹینر پر تھا اور ریاستی اداروں پر حملے کر رہا تھا۔ یہ شخص گالیاں دیتا تھا اور اس وقت کے وزیراعظم ملک کی تعمیر و ترقی کے لئے کام کر رہے تھے، 2014ء میں اس نے 126 دن یہاں فساد پھیلایا اور خالی ہاتھ گیا، آج ملک کے اندر تعمیر اور تخریب کے دو کردار ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ خونی مارچ، مسلح افراد کے ساتھ فتنہ و فساد مچانے کے لئے ایک شخص آج بھی کنٹینر پر کھڑا ہے۔ یہ وہی شخص ہے جو چار سال وزیراعظم کی کرسی پر مسلط رہا، عوام کو بے روزگار کیا، ان سے روٹی چھینی، لوڈ شیڈنگ کے عذاب میں مبتلا کیا، قرضوں کو 43 ہزار ارب روپے تک پہنچایا، مہنگائی کو 16 فیصد تک پہنچایا، چار سال اس شخص نے جھوٹے الزامات لگائے اور ثابت نہیں کر سکا، چار سال بعد یہ شخص ایک بار پھر کنٹینر پر ہے اور فتنہ اور فساد پھیلا رہا ہے۔ وزیراعظم شہباز شریف نے آج چار سال سے بند منصوبہ کروٹ ڈیم کو بحال کیا، یہ سی پیک کا منصوبہ تھا۔ ایک طرف تعمیر کی تصویر ہے اور دوسری طرف فساد اور فتنے کی۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف دن رات محنت کر کے عوام کو ریلیف دینے کے لئے کام کر رہے ہیں، ان نالائقوں، نااہلوں ار کرپٹ ٹولے کی مچائی ہوئی تباہی کو ٹھیک کرنے کی کوشش ہم کر رہے ہیں، دوسری طرف یہ تخریب کار اور فسادی فتنہ ایک بار پھر کنٹینر پر ہے۔ چار سال وزیراعظم کی کرسی پر مسلط رہا اور اب کس چیز پر احتجاج کر رہا ہے؟، عوام نے دیکھا پولیس والے شہید ہوئے، ان کے آفس ہولڈرز اور ٹکٹ ہولڈرز کے گھروں سے اسلحہ برآمد ہوا، عوام کو سڑکوں پر بلا کر خود ہیلی کاپٹر میں بیٹھے رہے۔

مریم اورنگزیب نے کہاکہ آج تعمیر و ترقی، نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی اور ملک کے اندر معاشی بحالی کا سفر شروع ہو چکا ہے، یہ فرق عمران خان کو سمجھنا ہوگا کہ آج 22 کروڑ عوام بھی پاکستان کی ترقی چاہتے ہیں، عوام وہ سیاست چاہتے ہیں جو کارکردگی اور تعمیر پر مبنی ہو، جس سے پاکستان کی عزت ہو، میڈیا کا بھی شکریہ ادا کرتی ہوں کہ انہوں نے حقائق پاکستان کے عوام کو دکھائے، عوام کو دعوت دیتی ہوں کہ وہ 28 مئی کو آئیں اور یوم تکبیر منائیں، 28 مئی پاکستان کی قومی سلامتی کو ناقابل تسخیر بنانے کا دن ہے، پاکستان میں آج کے بعد صرف خوشحالی اور ترقی کے سفر کو منایا جائے گا۔

کشمیری رہنما یاسین ملک کی سزا کی مذمت کرتے ہوئے مریم اورنگزیب مے کہا کہ انہیں فری ٹرائل تک رسائی نہیں دی گئی، کشمیر کے بہادر بیٹے نے تن تنہاء آزادی کی جنگ کی ترجمانی کی، آج ہندوستان کی عدالت سے انہوں نے چند سوالات کئے جس پر کوئی جواب نہیں آیا، بھارت انسانی حقوق اور آزادی اظہار رائے کی خلاف ورزیاں کر رہا ہے، بھارت کی پچہتر سال سے جاری ظلم و بربریت کو مسترد کرتے ہیں، اس ظلم کے خلاف آواز بلند کرتے رہیں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More