قومی ادارہ صحت نے منکی پاکس کے حوالے سے الرٹ جاری کر دیا

اسلام آباد: قومی ادارہ صحت نے منکی پاکس سے متعلق ہائی الرٹ جاری کر دیا۔ منکی پاکس کے بارے میں وفاقی اورصوبائی اداروں کو الرٹ جاری کیا گیا ہے۔

ماہرین قومی ادارہ صحت کے مطابق منکی پاکس زونوٹک وائرس سے لاحق ہونے والامرض ہے، اب تک مختلف ممالک میں منکی پاکس کے 92 مصدقہ کیسز سامنے آچکے ہیں۔

ماہرین قومی ادارہ صحت کے مطابق افریقی چوہے اور بندر منکی پاکس کی انسانوں میں منتقلی کاسبب بن رہے ہیں، منکی پاکس وائرس جانوروں سے جانوروں اور اب انسانوں میں منتقل ہو گیا ہے، منکی پوکس متاثرہ شخص کو ہاتھ لگانے اور دانوں کی رطوبت لگنے سے پھیلتا ہے۔

ماہرین قومی ادارہ صحت کے مطابق منکی پاکس کی علامات 1سے 3 روز میں ظاہرہوتی ہیں، مریض کے چہرے، جلد پر سرخ نشانات ظاہر ہوتے ہیں، بخار، سر، پٹھوں کا درد منکی پاکس کی اہم علامات ہیں، جبکہ منکی پاکس بیماری کی مدت دو تا چار ہفتے ہوتی ہے۔

ماہرین قومی ادارہ صحت کی جانب سے اسپتالوں میں موجود طبی عملے کو منکی پاکس کے مشتبہ مریضوں سے احتیاط سے پیش آنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

دوسری جانب محکمہ صحت سندھ نے بھی منکی پاکس بیماری پھیلنے کا خدشے کے تحت الرٹ جاری کردیا۔

محکمہ صحت حکومت سندھ کی جانب سے بیماری کا پھیلاو روکنے کے لیے لیبارٹری اور سرویلنس کے عمل کو بڑھانے کے لئے حکم نامہ جاری کیا گیا ہے، وبا زدہ ممالک سے آنے والے مسافروں کی اسکریننگ کی جائے گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More