حکومت کا سودی بجٹ عوام پر خود کش حملہ ہے، سراج الحق

لاہور: امیر جماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا ہے کہ حکومت کا سودی بجٹ عوام پر خود کش حملہ ہے۔آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پر بنے بجٹ کو یکسر مسترد کرتے ہیں۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ نبی کریم ﷺ کی حرمت کا تحفظ ہمارے ایمان کا حصہ ہے جب تک نبی کریم ﷺ کی شان میں گستاخی کرنے والے دنیا بھر کے مسلمانوں سے معافی نہ مانگ لیں ،ہندوستان سے اپنا اور پاکستان سے بھارتی سفیر کو واپس بھیجا دینا چاہیے۔

امیرجماعت اسلامی نے بڑھتی ہوئی مہنگائی ،کرپشن اور سود کے خلاف 25 جون سے ٹرین مارچ کا بھی اعلان کر دیا۔

لاہور مال روڈ پر ناموس رسالت ﷺکے تحفظ، سودی معیشت کے خاتمے کے خلاف جماعت اسلامی نے عوامی مارچ سے خطاب کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ حکومت نے ماضی سے کوئی سبق نہیں سیکھا اور آئی ایم ایف کی ڈکٹیشن پر پر بجٹ بنایا ہے جسے ہم یکسر مسترد کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سودی نظام کی وجہ سے ملک کا بچہ بچہ مقروض ہو چکا ہے ۔مہنگائی کے خاتمے کا اعلان کرکے آنے والوں نے ایک ہفتے میں 60 روپے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کرکے عوام کو پیس کر رکھ دیا ہے ۔یکم جون سے وزیراعظم نے لوڈشیڈنگ ختم کرنے کے اعلان کیا تھا لیکن حال یہ ہے کہ لاہور کے عوام بھی شدید گرمی میں آٹھ سے دس گھنٹے تک لوڈشیڈنگ برداشت کر رہے ہیں۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ نبی کریم ﷺکی ناموس کا تحفظ ہمارے ایمان کا حصہ ہے ۔دنیا بھر میں مسلمان گستاخی پر احتجاج کر رہے ہیں لیکن کسی ملک نے بھارتی سفیر کو ملک بدر نہیں کیا ۔گزشتہ دنوں اسلام آباد میں احتجاج پر ہمارے راستے میں خار دار تاریں بچھا دیں گئی۔کیا یہ اقدام کسی مسلمان حکمران کے شایان شان ہے؟۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More