لاہور سمیت پنجاب میں گیس لوڈشیڈنگ کا دورانیہ مزید بڑھ گیا

لاہور: سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی لاہور سمیت پنجاب بھر میں گیس لوڈشیڈنگ کا دورانیہ بھی بڑھ گیا۔ گیس کی بدترین لوڈشیڈنگ نے شہریوں کی زندگی اجیرن بنادی ہے۔سوئی ناردرن گیس کمپنی انتظامیہ نے کمپریسر استعمال کرنے والوں کے خلاف کارروائیاں شروع کردیں۔

لاہور سمیت پنجاب بھر میں موسم سرما میں گیس کی بد ترین لوڈ شیڈنگ جاری ہے۔سوئی نادرن گیس کمپنی کی جانب سے دئیے گئے چوبیس گھنٹوں میں سےتین وقت میں گیس کی فراہمی بھی مشکل ہو گئی ہے۔شہر کے بیشتر علاقوں میں گیس قلت کی شکایات بھی عام ہونے لگیں ہیں جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ اول تو گیس آتی نہیں اور اگر آئے بھی پریشر انتہائی کم ہوتا ہے جس سے نہ کھانا پکایا جاتا ہے اور نہ ہی پانی گرم ہوتا ہے۔گیس کی لوڈ شیڈنگ کے ساتھ ہی ایل پی جی سلنڈر ،کوئلے اور لکڑی کی مانگ کے اضافے کے ساتھ ہی قیمت میں بھی اضافہ ہو گیا۔

دوسری جانب سوئی ناردرن گیس کمپنی انتظامیہ نے گیس پریشر کو بڑھانے کے لیے کمپریسر کے استعمال پر ایک ماہ کے لیے صارف کا کنکشن منقطع رکھنے کا فیصلہ کر لیا۔ لاہور ریجن کی ٹیموں نے کارروائی کرتے ہوئے دو سو ستر سے زائد کمپریسر قبضے میں لے کر کنکشن ایک ماہ کے لیے منقطع کر دیئے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More