موجودہ حکومت ایک ڈیڑھ ماہ میں رخصت ہوجائے گی، عمران خان

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم و چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف اور دیگر ممالک کو یقین ہے کہ عوام اس حکومت کیساتھ نہیں ہیں اسی وجہ سے وہ مدد نہیں کر رہے، اس صورتحال کو دیکھ کر لگتا ہے حکومت ایک ڈیڑھ ماہ میں رخصت ہوجائے گی۔

بنی گالہ میں اینکر پرسنز اور سینئر صحافیوں سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جب تک ہمیں عام انتخابات کی تاریخ نہیں مل جاتی ہماری جدوجہد جاری رہے گی، امپورٹڈ حکومت ملک کو معاشی تباہی کی طرف لے جارہی ہے، جولائی سے کمر توڑ مہنگائی کا غریب عوام سامنا کیسے کریں گے، اس بجٹ کو آئی ایم ایف بھی کسی صورت نہیں مانے گا، عالمی اداروں کو بھی موجودہ حکومت کی نااہلی کا یقین ہے۔

عمران خان نے کہا کہ کوئی بھی یہ نہ سمجھے کہ لانگ مارچ ختم ہوگیا ہے،جلد ہی اسلام آباد کا رخ کرونگا، ہمیں سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار ہے جس کے بعد لانگ مارچ پوری قوت سے ہوگا، ہم حکومت کے فسطائی ہتھکنڈوں کا بھرپور مقابلہ کریں گے۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ موجودہ سیاسی ومعاشی بحران سے طاقتور حلقے بھی پریشان ہوچکے ہیں اور بحران سے نکلنے کا سوچ رہے ہیں، اس سیاسی عدم استحکام سے نکلنے کا واحد راستہ عام انتخابات ہیں، ملک کو موجودہ حالات کا سامنا کرنے کیلئے مضبوط قیادت کی ضرورت ہے اور مضبوط قیادت شفاف الیکشن کے ذریعے ہی سامنے آسکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت سے نکلنے کے بعد میرے سامنے 2 ہی راستے تھے، طاقتور حلقوں سے معافی مانگ کر پاؤں پکڑتا یا عوام کے پاس جاتا، میں نے دوسرا راستہ اپنایا اور عوام کے پاس گیا۔

عمران خان نے کہا کہ الیکشن کمیشن کیساتھ دیگر اداروں میں بھی اہم تعیناتیاں کی جارہی ہیں، پنجاب پولیس میں بھی بڑے پیمانے پر تبادلے ہورہے ہیں، اہم تعیناتیوں، تقرروتبادلوں کا واحد مقصد الیکشن چوری کی تیاری ہے، انہوں نے کہا کہ ہمیں معاملات کا اندازہ ہے اور مقابلہ کرنے کیلئے پوری طرح تیار ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More