عمران خان نے اپنی حکومت میں 20ہزار ارب سے زائد کا قرض لیا، مفتاح اسماعیل

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ کہ کسی وزیراعظم کے لیے اس طرح پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانا آسان نہیں۔اگر ہم پی ٹی آئی کے آئی ایم ایف سے کیے معاہدے پر چلتے تو پیٹرول 300 روپے لیٹر ہوتا۔ سب وزرائے اعظم نے ملکر 24ہزار ارب قرض لیا،عمران خان نے اپنی حکومت میں 20ہزار ارب سے زائد کا قرض لیا۔

اسلام آباد میں بزنس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ ملک مشکل میں ہے،سب ملکر مسائل پر قابو پائیں گے،حکومت ملی تو پاکستان مہنگائی میں تیسرے نمبر پر تھا،گزشتہ 4سال میں 2کروڑلوگ خط غربت سے نیچے چلے گئے۔ ۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہر سال 18 سے 20 لاکھ افراد لیبر مارکیٹ جوائن کرتے ہیں۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ حکومت رواں سال توانائی کے شعبے میں 1100ارب کی سبسڈی دے گی،پیٹرولیم کے شعبے میں 81ار ب روپے کی سبسڈی دے گی، حکومت پیٹرولیم کے شعبے میں 81ار ب روپے کی سبسڈی دے گی، آئندہ سال 21ارب ڈالر قرض واپس کرناہے،آئندہ سال کرنٹ اکاونٹ خسارہ 1200ارب لائیں گے ۔

انہوں نے بتایا کہ عمران خان فروری میں روس گئے، گندم اور گیس پر بات ہوئی، تیل کا کہیں ذکر نہیں تھا، حماد اظہر نے 30 مارچ کو تیل کے لیے روس کو خط لکھا، جواب نہیں آیا۔ ہم گندم برآمد کر رہے تھے اس سال درآمد کریں گے، پچھلی حکومت نے چینی 48 روپے کی برآمد کرکے 96 روپے کی درآمد کی۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ ہمیں مشکل حالات میں پاکستان ملا ہے اور بہتر حالات میں چھوڑ کر جائیں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More