قومی اسمبلی اجلاس کا ایجنڈا جاری

اسلام آباد: قومی اسمبلی سیکرٹریٹ نے اجلاس کا دو نکاتی ایجنڈا جاری کردیا۔ قومی اسمبلی کا اجلاس پیر کی دوپہر 2 بجے ہو گا۔

ایجنڈے میں کہا گیا ہےکہ قومی اسمبلی اجلاس میں نئے قائد ایوان کا انتخاب کیا جائے گا۔

قومی اسمبلی اجلاس کے ایجنڈے میں کہا گیا ہےکہ آئین کے آرٹیکل 91 کے تحت قائد ایوان کے انتخاب کے لیے ووٹنگ ہو گی۔

ایجنڈے کے مطابق قائد ایوان کے انتخاب کی کاروائی قومی اسمبلی رولز کے قاعدہ 32 کے تحت عمل میں لائی جائے گی۔

ایجنڈے کے مطابق قائد ایوان کے انتخاب کے لئے کل سپیکر چیئر سے شیڈول پڑھ کر سنایا جائے گا۔ قائد ایوان کے انتخاب کے لئے تمام ارکان کو ایوان میں کارروائی کا آغاز ہوتے ہی پہنچنا ہوگا۔

ارکان کو ایوان میں حاضری کے لیے پانچ منٹس تک گھنٹیاں بجائی جائیں گی۔ تمام ارکان کے حاضر ہونے اور پانچ منٹس گھنٹیاں بجنے کے بعد تمام دروازے بند کردیئے جائیں گے۔ دروازوں کے مقفل ہونے کے بعد کوئی رکن اندر سے باہر یا باہر سے اندر داخل نہیں ہوسکے گا۔ لابیز کے دروازوں پر سارجنٹ ایٹ آرمز متعین کردیئے جائیں گے۔

سپیکر چیئر سے ایوان کو دو حصوں میں تقسیم کردیا جائے گا۔

قائد ایوان کے انتخاب کے لیے میاں شہباز شریف اور شاہ محمود قریشی دو امیدوار ہیں۔ دونوں امیدواران کے لئے الگ الگ لابیز مختص کی جائیں گی جہاں ان کے ووٹر اپنے ووٹ کاسٹ کے ساتھ داخل ہونگے۔

تمام ارکان کے ایوان سے رخصت ہونے کیساتھ ہی گھنٹیاں بجا کر حال کو بند کردیا جائیگا۔ نتائج کی گنتی مکمل ہونے کے بعد لابیز کھول دی جائیں گی اور ارکان کے سامنے نتائج رکھے جائیں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More