اہم خبریں پاکستان

کامران عرف منا کا سنی تحریک کے14 کارکن قتل کرنے کا اعتراف

ایم کیوایم کے کارکن کامران عرف منا نے دوران تفتیش سنی تحریک کے چودہ کارکنان کو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے۔ قانون نافذ کرنیوالے اداروں نے ملزم کی جے آئی ٹی رپورٹ عدالت میں جمع کرادی۔

ایم کیوایم کے کارکن کی جے آئی ٹی رپورٹ عدالت میں پیش کردی گئی۔ کامران عرف منا نے سنی تحریک کے کارکنوں سمیت چودہ افراد کے قتل کا اعتراف کیا ہے۔ ملزم نے دوران تفتیش انکشاف کیا کہ پارٹی عہدیدار کے کہنے پر تمام قتل کئے۔ پارٹی کیلئے تاجروں سے بھتہ وصول کرتا تھا۔ دو ہزار بارہ میں فیضان لاہوری اور نعیم ہاڑا ہوڑہ کے ساتھ سنی تحریک کے دفتر پر حملہ میں دو کارکنوں کو قتل کیا۔ چوبیس اگست دو ہزار چودہ کو سراج احمد نامی شخص کو رنچھوڑلائن میں قتل کیا۔ سترہ اپریل دو ہزار بارہ کو باسط اور عامر عباسی کے ساتھ ملکر سابق کارکن ساتھی سلمان کاٹھیاواڑی کوقتل کیا۔ گیارہ مارچ دو ہزار گیارہ کو عدنان ایڈی،عامر عباسی کے ساتھ اسلم گھانچی نامی شخص کا قتل کیا۔

Related posts

امریکا نے ڈرون حملوں میں عام شہریوں کی اموات پر مبنی رپورٹ جاری کردی

nehal qavi

سعودی عرب میں جسم فروشی کا دھندہ کرانے والا مرکزی ملزم گرفتار

Abuzar Usama

اورکزئی ایجنسی: دہشتگردوں نے گرلز اسکول کو بارودی مواد سے اڑا دیا

login web

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More