آئندہ مالی سال میں 699 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کی جائے گی

اسلام آباد: بجٹ دستاویز کی مطابق رواں مالی سال کے بجٹ میں 682 ارب روپے سبسڈی کیلئے مختص کیے گئے تھے تاہم نظر ثانی شدہ رقم 1515 ارب روپے ہو گئی ہے۔آئندہ مالی سال پاور سبسڈی کیلئے 490 ارب روپے مختص کرنے کرنے کی تجویز دی گئی ہے ، رواں مالی سال کیلئے 511 ارب روپے مختص کیے گئے تھے جبکہ نظر ثانی شدہ سبسڈی 989 ارب روپے ہو گئی۔

آئندہ مالی سال میں کے الیکٹرک کو 80 ارب روپے کی سبسڈی دی جائے گی کے الیکٹرک کو 60 ارب ٹیرف سبسڈی ، 13 ارب صنعتی پیکیج سبسڈی اور 7 ارب ٹیوب ویل سبسڈی ملے گی ۔آئندہ مالی سال میں پٹرولیم مصنوعات پر 71 ارب روپے کی سبسڈی دی جائے گی رواں مالی سال 377 ارب روپے کی پٹرولیم سبسڈی دی گئی آئندہ مالی سال صنعتی شعبے کو ایل این جی فراہمی پر 40 ارب روپے کی سبسڈی کی تجویز ہے رواں مالی سال صنعتی شعبے کو ایل این جی کی فراہمی پر 81 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کی گئی۔

آئندہ مالی سال میں پاسکو کو گندم خریداری پر 7 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کی جائے گی آئندہ مالی سال میں یوٹیلیٹی سٹورز کو وزیر اعظم پیکیج کے تحت 12 ارب روپے جبکہ رمضان پیکیج کے تحت 5 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کی جائے گی آئندہ مالی سال کھاد کارخانوں کو 15 ارب روپے اور یوریا کی درآمد پر 6 ارب کی سبسڈی دی جائے گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More