اب تک پاکستان تازہ ترین نیوز ٹکر پاکستان

این اے 125 الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ، 51 حلقوں کے لیے خطرہ

این اے 125  کے انتخابی نتائج کالعدم قرار دینے کے الیکشن ٹربیونل کے فیصلے نے 51 دیگر ارکان قومی اسمبلی کے لئے خطرے کی گھنٹی بجادی۔ خواجہ سعد رفیق کے حلقے سے متعلق فیصلے کو بنیاد بنایا گیا تو قومی اسمبلی کے 51 حلقوں کے انتخابی نتائج مشکوک ہوجائیں گے۔

الیکشن کمیشن کے اعلی حکام نے انکشاف کیا ہے کہ این اے 125 سے متعلق الیکشن ٹربیونل کے فیصلے کو بنیاد بنایا گیا تو 51 حلقوں کے انتخابی نتائج مشکوک ہوسکتے ہیں کیونکہ الیکشن کمیشن کے ایک اعلی افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ این اے 125 میں مصدقہ نتائج کی غیر موجودگی الیکشن ٹربیونل کے فیصلے کی بنیاد بنی جس کے بعد وہاں دوبارہ انتخابات کا حکم دیا گیا۔ ریکارڈ کے مطابق این اے 125 کے کئی پولنگ اسٹیشن کے فارم 14 اور فارم 15 سرے سے ہی غائب تھے۔ فارم 14 میں پولنگ اسٹیشن وار انتخابی نتائج جبکہ فارم 15 میں بیلٹ پیپرز کی تفصیلات ہوتی ہیں۔ ریٹرنگ افسران نے مجموعی نتیجہ فارم 16 تیار کرتے وقت فارم 14 یعنی پولنگ اسٹیشن وار نتائج کو سامنے رکھا ہی نہیں جبکہ الیکشن کمیشن کے پاس قومی اسمبلی کے 51 حلقوں  کے انتخابی فارمز 14 اور 15 کا کوئی ریکارڈ موجود ہے نہ ہی ریٹرننگ افسران نے مذکورہ فارمز الیکشن کمیشن کو بھجوائے نہیں۔

الیکشن کمیشن ذرائع کا کہنا ہے کہ پولنگ اسٹیشن کے مصدقہ نتائج کی غیر موجودگی وجہ بنی تو 51 حلقوں کے انتخابات کالعدم ہوسکتے ہیں، جس سے نواز لیگ کے 32، جے یوآئی کے 6، پیپلز پارٹی، تحریک انصاف اور ایم کیو ایم کے 3، 3 ارکان کی رکنیت خطرے میں پرسکتی ہے۔ یوں پنجاب کے 36 ،سندھ کے 7، بلوچستان اور خیبر پختنخواہ کے تین تین، قومی اسمبلی کے حلقوں کے انتخابی نتائج کالعدم قرار دیئے جاسکتے ہیں ۔ ایسا ہوا تو خواجہ سعد رفیق کے بعد سردار ایاز صادق، حمزہ شہباز، عابد شیر علی، شیخ روحیل اصغر، شاہ محمود قریشی، سکندر بوسن ،خورشید شاہ، مولانا محمدخان شیرانی، آفتاب شعبان میرانی، غوث بخش مہر، جعفر خان لغاری سمیت 51 ارکان قومی اسمبلی کی رکنیت خطرے میں پڑ جائے گی۔

Related posts

جذبہ آذادی سے سرشار نہتے کشمیریوں نے کرفیو توڑ ڈالا

shakir shaikh

نیوزی لینڈ کی ٹیم کل اپنے وطن واپس روانہ ہو جائے گی، وسیم خان

Rauf Ansari

حکومت غلط ہوگی تو مخالفت کریں گے، خورشید شاہ

faraz ahmed

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More