اب تک پاکستان تازہ ترین پاکستان

سیاسی پارٹیوں کی جانب سے جوڈیشل کمیشن کے پاس فریق بننے کی درخواستیں آنا شروع

عوامی نیشنل پارٹی اور مہاجر قومی مومنٹ نے جوڈیشل کمیشن میں فریق بننے کے لیے درخواستیں جمع کروا دیں جبکہ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے اپنے اوپر لگنے والے ممکنہ الزامات کے جواب دینے کے لیے کمیشن کے روبرو پیش ہونے کی درخواست دائر کر دی۔

سپریم کورٹ میں عام انتخابات کی دھاندلی کی تحقیقات کرنے والے جوڈیشل کمیشن کے پاس سیاسی پارٹیوں کی جانب سے فریق بننے کی درخواستیں آنا شروع ہو گئی ہیں۔ آج عوامی نیشنل پارٹی، مہاجر قومی مومنٹ اور سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی جانب سے کمیشن کو درخواستیں جمع کروائی گئیں۔

عوامی نیشنل پارٹی کی جانب سے لطیف آفریدی، سینیٹر زاہد خان اور میاں افتخار حسین نے درخواست جمع کروائی۔ اس موقع پر میاں افتخار حسین کا کہنا تھا کہ ہم نے الیکشن دھاندلی کے باوجود تسلیم کیا تھا لیکن اب جوڈیشل کمیشن کے قیام کے بعد ہم نے ثبوت پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف جس جگہ سے جیتے وہاں دھاندلی نہیں ہوئی جہاں ہاری ہے وہاں دھاندلی کا شور مچا رہی ہے۔

مہاجر قومی مومنٹ کے آفتاب حسین نے اپنی پارٹی کی جانب سے درخواست جمع کروانے کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ متحدہ قومی موومنٹ نے الیکشن میں منظم انداز میں دھاندلی کی جس کے ثبوت ہم نے کمیشن کو پیش کر دیے ہیں۔ سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کے وکیل شیخ احسن کا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف نے سابق چیف جسٹس پر الزامات لگائے ہیں۔ انہوں نے آج کمیشن کو درخواست کی ہے کہ وہ ان الزامات کا خود پیش ہو کر جواب دینا چاہتے ہیں۔

عام انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کرنے والے کمیشن کے پاس درخواستیں اور ثبوت پیش کرنے کے لیے پندرہ اپریل تک کی مہلت ہے جس کے بعد سولہ اپریل کو کمیشن باقاعدہ تحقیقات کا آغاز کر دے گا۔

 

Related posts

پی سی بی کا جنوبی افریقہ کیخلاف17رکنی ٹیسٹ اسکواڈ کا اعلان

Hassam Alam

راولپنڈی اور میانوالی میں سزائے موت کے قیدیوں کو تختہ دار پر لٹکا دیا گیا

login web

اسپیکر قومی اسمبلی کی اپوزیشن جماعتوں کو قومی مکالمے کی پیشکش

faraz ahmed

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More