تازہ ترین
فاسٹ بولرسہیل خان کی 4سال بعد قومی ٹیم میں واپسی کا امکان

فاسٹ بولرسہیل خان کی 4سال بعد قومی ٹیم میں واپسی کا امکان

ڈربی شائر: (1 اگست 2020) فاسٹ بولر سہیل خان دورہ انگلینڈ میں پاکستان کے کامیاب ترین بولرثابت ہوئے ہیں۔ چار انٹر اسکواڈ پریکٹس میچوں میں سہیل خان نے دو بار اننگ میں پانچ کھلاڑی آؤٹ کیے۔ اس عمدہ کارکردگی کی بنا پر سہیل خان کا چار سال بعد قومی ٹیم میں واپسی کا روشن امکان ہے۔

دورہ انگلینڈ میں شاہین شاہ، نسیم شاہ اور محمدعباس کو پاکستان پیس اٹیک میں اہمیت دی جا رہی تھی۔ ان تینوں کی کارکردگی بھی حسب توقع عمدہ رہی ہے لیکن سہیل خان نے حیران کن شاندار پرفارمنس سے چار سال بعد پاکستان ٹیسٹ ٹیم میں واپسی کا امکان روشن کر لیا۔ رائٹ آرم فاسٹ بولر نے قومی ٹیم کے چار انٹر اسکواڈ پریکٹس میچوں میں دومرتبہ اننگ میں پانچ کھلاڑی آؤٹ کیے اور اپنی کارکردگی سے سب کو متاثر کیا۔

پانچ اگست کومانچسٹر میں انگلینڈ کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں سہیل خان کی واپسی متوقع ہے۔ سہیل خان نے دوہزار نو میں سری لنکاکے خلاف کراچی میں ٹیسٹ ڈیبیوکیا۔ انہوں نے نوٹیسٹ میچز کے مختصر کیریئرمیں ستائیس کھلاڑی میدان بدرکیے۔ بہترین بولنگ اڑسٹھ رنز دیکر پانچ وکٹیں رہی۔ انہوں نے اننگ میں دومرتبہ پانچ کھلاڑی آؤٹ کیے۔نچلے نمبروں پر وہ قابل اعتماد بیٹسمین بھی ثابت ہوئے۔دسمبر دوہزارسولہ میں آسٹریلیامیں اپنےآخری ٹیسٹ میں سہیل خان نے پینسٹھ رنز کی عمدہ اننگ بھی کھیلی۔ پاکستان کے سابق کوچ مکی آرتھرکا کہنا تھا کہ سہیل خان پانچ سال قبل ایسی پرفارمنس دیتے تو ٹیم کے مستقل رکن ہوتے۔انہوں نے فاسٹ بولرنے چارقیمتی سال ضائع کردیے۔

Comments are closed.

Scroll To Top