بل کے خلاف عدالتوں اور عوام کے درمیان جائیں گے، اپوزیشن اراکین

کراچی: سندھ اسمبلی میں ہنگامہ خیز اجلاس اور بلدیاتی ایکٹ میں ترامیم سے متعلق بل پاس کیے جانے کے بعد اپوزیشن جماعتوں اور حکومتی وزرا نے ایک دوسرے کو تنقید کا نشانہ بنایا۔حلیم عادل شیخ ، محمد حسین ، عارف جتوئی اور کنور نوید نے حکومت پر طنز کے نشتر بر سادیے۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما کنور نوید جمیل نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی والے نہیں چاہتے کہ کوئی کراچی کے لوگوں کی خدمت کرے۔

اپوزیشن لیڈر حلیم عادل شیخ نے کہا مراد علی شاہ نے آج ثابت کردکھایا کہ وہ صوبے کو زر دارانہ نظام کے تحت چلانا چاہتے ہیں ، وزیر اعلی کہتے ہیں کہ اپوزیشن کو اٹھا کر باہر پھینک دو، ہم عوام کے ساتھ ان کو ہی اٹھا کر باہر پھینک دیں گے ۔

سندھ اسمبلی کے ایوان میں پاس کردہ بلدیاتی ترامیم سے متعلق بل کے خلاف اپوزیشن جماعتوں نے عوامی احتجاج کا عندیہ دے دیا ۔ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے پی ٹی آئی رکن اسمبلی بلال غفار نے کہا کہ ایوان میں بات کرنے کی اجازت نا ملنے اور اپوزیشن لیڈر کا مائک بند کروائے جانے پر احتجاج کا راستہ اپنا یا۔

ایم کیو ایم کے محمد حسین نے کہا کہ اسپیکر سمیت تمام ارکان نے جمہوریت کی دھجیاں بکھیر دیں ۔ جی ڈی اے کے عارف مصطفی جتوئی نے عوام کو مخاطب کرکے کہا کہ وہ سڑکوں پر نکل کر اپنے حقوق حاصل کریں ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More