بارشوں کے باعث اب تک ستتر ہلاکتیں ہوچکی ہیں،شیری رحمان

اسلام آباد: ملک میں جاری مون سون بارشوں سے شدید نقصان ہو رہا ہے۔ ان بارشوں کے باعث اب تک ستتر ہلاکتیں ہوچکی ہیں۔ وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی شیری رحمان کے مطابق صرف بلوچستان میں انتالیس اموات سمیت ڈیڑھ سوسے زائد مکانات منہدم ہوئے اور بارہ سے زائد مویشیوں کا نقصان ہوا۔ بلوچستان اور سندھ میں ڈھائی سو ملی ميٹرتک بارش متوقع ہے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی شیری رحمان نے بتایا کہ حالیہ بارشوں سے ابتک ملک بھر میں مجموعی طور پر ستتر افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ بارشوں کے باعث سب سے زیادہ جانی اور مالی نقصان بلوچستان میں ہوا۔ حالیہ مون سون سسٹم کو موسمیاتی تبدیلی کا اثر قرار دیتے ہوئے بتایا کہ پاکستان ماحولیات تبدیلی سے متاثرہ ممالک میں چھٹےنمبرپرہے۔ اس مون سون کے اثرات ستاسی فیصد زیادہ ہے موجودہ مون سون سیزن آگے پنجاب کو بھی متاثر کرے گا۔

وفاقی وزیر شیری رحمان نے خبردارکیا کہ بلوچستان میں دو سو چوہتر اور سندھ میں دو سو اکسٹھ ملی ميٹرتک بارشیں متوقع ہیں ۔صوبوں کو وفاقی حکومت کی ضرورت پڑی تو متعلقہ اداروں سے بات کریں گے۔ انہوں نے بڑھتے ہوئے عالمی درجہ حرارت کے باعث طویل المدتی منصوبہ بندی کی ضرورت پر بھی زور دیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More