تباہی سرکار نے بجلی کی قیمت میں 18 روپے کا اضافہ کیا،شیری رحمان

اسلام آباد: نائب صدر پیپلزپارٹی و سینیٹر شیری رحمان کہتی ہیں غریب عوام کو ‘ریلیف پیکج’ دینے کے دعویدار آئے دن مہنگائی کا بم گراتے ہیں، کیا صارفین مہنگی ایل این جی سے بجلی پیدا کرنے کے ذمہ دار ہیں۔

نائب صدر پیپلزپارٹی و سینیٹر شیری رحمان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے ٹویٹ میں کہا کہ ‏‏فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں حکومت بجلی کی قیمت میں 4 روپے 33 پیسے اضافہ کر رہی ہے، اس سے صارفین پر 40 ارب روپے سے زائد کا بوجھ ڈالا جائے گا۔ تباہی سرکار نے ایک سال بجلی کی فی یونٹ قیمت میں 18 روپے سے زائد اضافہ کیا ہے، ایک سال میں بجلی کی قیمتوں میں 9 مرتبہ اضافہ کر کے عوام سے 600 ارب روپے سے زائد لوٹے گئے۔

شیری رحمان کا کہنا تھا کہ ملک میں پہلے ہی ماہانہ مہنگائی کی شرح 11.5 فیصد ہو گئی ہے، مہنگائی سے پریشان عوام پر مزید بوجھ نہ ڈالا جائے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More