‏آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدے کی تفصیلات تشویشناک ہیں،‏شیری رحمان

اسلام آباد: نائب صدر پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان کا کہنا ہے کہ ‏آئی ایم ایف کے ساتھ طے پانے والے معاہدے کی تفصیلات تشویشناک ہیں،‏حکومت اب آئی ایم ایف کی مرضی کے مطابق معیشت چلائے گی.

ایک ٹوئیٹ میں سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ ‏آئی کہانی منی بجٹ اور مرکزی بینک گروی رکھنے تک نہیں رکتی،آئی ایم ایف نے مزید ٹیکس بڑھانے، ٹیکس چھوٹ ختم کرنے اور بجلی کی قیمتوں میں مزید اضافے کا مطالبہ کیا ہے ‏حکومت اب آئی ایم ایف کی مرضی کے مطابق معیشت چلائے گی۔

آئی ایم ایف نے آئندہ بجٹ میں 4 کھرب 30 ارب روپے کے نئے ٹیکس عائد کرنے کا کہا ہے اس کا مطلب ہے آئندہ سال تک مہنگائی کم ہونے کا کوئی امکان ہی نہیں،مہنگائی پہلے ہے 13 فیصد ہے جو دو سال کی بلند ترین سطح پر ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More