سروسز اسپتال کے بعد شیخ زاید اسپتال میں بھی ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت مریضہ کی جان لے گئی

لاہور: لاہور کے سرکاری استپال موت تقسیم کرنے لگے، سروسز اسپتال کے بعد شیخ زاید اسپتال میں بھی ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت سے ایک مریضہ جان کی بازی ہار گئی۔

ذرائع کے مطابق شیخ زاید اسپتال میں 26 سالہ گائنی کی مریضہ جاں بحق ہوگئی۔ مریضہ کے لواحقین نے موت کا ذمہ دار ڈاکٹرز کو قرار دےدیا۔

مریضہ کےلواحقین نے شیخ زاید اسپتال میں ڈیڈ باڈی رکھ کر احتجاج کیا، لواحقین کا کہنا ہے کہ 26 سالہ فردوس نامی مریضہ کا گائنی کا آپریشن ٹھیک نہیں ہوا تھا، شیخ زاید اسپتال لاہور میں علاج کےدوران مریضہ کے گردے بھی فیل ہوگئے تھے۔

لواحقین نے کہا کہ مریضہ کو 24 دسمبر کو ڈلیوی کیلئے شیخ زاید اسپتال لایا گیاتھا، تاہم ڈاکٹرز نے آپریشن میں کوتاہی برتی، جس کی وجہ سے مریضہ جان کی بازی ہار گئی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More