سندھ ہائیکورٹ کے حکم پر رہائشی عمارت مکہ ٹیرس کو توڑنے کا آغاز

کراچی: سندھ ہائیکورٹ کے حکم پر رہائشی عمارت مکہ ٹیرس کو توڑنے کا آغاز کردیا گیا۔ ایس بی سی اے اور پولیس نے مکہ ٹیرس توڑنے کے حوالے سے آپریشن شروع کیا تو علاقہ مکین مزاحمت پر اتر آئے۔ پولیس اور مکینوں کے درمیان تلخ کلامی بھی دیکھی گئی ۔

عدالتی حکم کے بعد کے الیکٹرک نے 14 فلیٹوں پر مشتمل عمارت کی بجلی کاٹ دی ہے تاہم رہائشیوں نے عمارت کو خالی کرنے سے انکار کردیا۔ ایس بی سی اے کی جانب سے عمارت مسمار کرنے کے عمل کا آغاز کرنے کے بعد رہائشیوں نے شدید احتجاج کیا جس کے باعث عمارت کا غیر قانونی حصہ گرانے کا کام روک دیا گیا ہے۔

واضح رہےکہ سپریم کورٹ نے کراچی کے نسلہ ٹاور کو بھی بارود سے گرانے کا حکم دیا ہے جس کے بعد انتظامیہ نے عمارت گرانے کے لیے کمپنیوں کو طلب کرلیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More