اسلام آباد میں سال کا پہلا دہشت گردی کا واقعہ ہوا،شیخ رشید

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں گزشتہ رات فائرنگ واقعے میں شہید ہونے والے پولیس کانسٹیبل منورحسن کی نماز جنازہ ادا کردی گئی،وزیر داخلہ شیخ رشید نمازہ جنازہ میں شریک ہوئے۔ کہتے ہیں یہ اس سال کا پہلا واقع ہے ہمیں بہت الرٹ رہنے کی ضرورت ہے،فورسز پاکستان کی حفاظت کے لئے جان کا نظرانہ دینے کو تیار ہیں۔

اسلام آباد میں دہشتگردی کا واقعہ،ڈیوٹی پر مامور ہیڈ کانسٹیبل منور حسن دہشتگردوں کی فائرنگ سے شہید،شہید ہیڈ کانسٹیبل کی نماز جنازہ پولیس لائن ہیڈ کوارٹر میں ادا کردی گئی۔ شہید ہیڈ کانسٹیبل کے بھائی عابد حسن نے بتایا کہ منور حسن نے ہمیشہ فرائض کی اداءیگی کو پہلی ترجیح دی اور ہمیں ان کی شہادت پر فخر ہے ۔

وزیر داخلہ شیخ رشید نے شہید پولیس اہلکار کے نماز جنازہ میں شرکت کی اس موقع پر وفاقی وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ اسلام آباد میں پولیس پر فائرنگ چوری یا ڈکیتی کا واقعہ نہیں بلکہ یہ اس بات کا اشارہ ہے کہ اسلام آباد میں سال کا پہلا دہشت گردی کا واقعہ ہوا ہے، سیکیورٹی فورسز اور ہمیں الرٹ رہنے کی ضرورت ہے۔

نماز جنازہ میں آئی اسلام آباد احسن یونس سمیت پولیس کے سینئر افسران نے شرکت کی اسلام پولیس کے چاق و چوبند دستے نے شہید کے جسد خاکی کو سلامی پیش کی اور پھولوں کے گلدستے چڑھائے جبکہ تدفین کے لیے آبائی علاقے روانہ کر دیا گیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More