شہبازشریف منی لانڈرنگ کے مرتکب پائے گئے،شہزاد اکبر

اسلام آباد: وزیراعظم کےمعاون خصوصی شہزاد اکبر نے پریس کانفرنس میں کہا ہےکہ شہبازشریف خاندان کیخلاف نیب چالان میں حیران کن چیزیں سامنےآئی ہیں،شہبازشریف کیخلاف چالان میں100سےزائد گواہ ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف منی لانڈرنگ کے مرتکب پائے گئے،شہبازشریف منی لانڈرنگ گروہ کے سرغنہ اورماسٹر مائنڈ ہیں،حدیبیہ پیپرمل کیس کا طریقہ ہی منی لانڈرنگ کیس میں اپنایا گیا ہے۔ شہباز شریف، حمزہ شہباز اور سلمان شہباز نے 16 ارب سے زائد کی منی لانڈرنگ کی، 28اکاؤنٹس 2008سے2018تک کھولے گئے،تمام اکاؤنٹس شہبازشریف کے بطور وزیراعلیٰ دور میں کھولے گئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ تمام اکاؤنٹس رمضان شوگرملز کے چھوٹے ملازمین کے نام پر کھلوائے گئے،چالان کے ساتھ دستاویزی ثبوت بھی لگائے گئے ہیں،ٹرانزیکشنزکی4300 دستاویزات ہیں،شریف خاندان نے تفتیش کے دوران کوئی مناسب تعاون نہیں کیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More