موجودہ حکومت ٹیلی فون کالز پر کھڑی ہے،شاہد خاقان

احتساب عدالت اسلام آباد میں ایل این جی ریفرنس کی کارروائی گواہوں کی عدم دستیابی کے باعث ملتوی کردی گئی۔ ریفرنس میں نامزد مرکزی ملزم سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ایک پھر احتساب کے نام پر جاری کاروائی عوام کو براہ راست دکھانے کا مطالبہ دہرایا۔ کہتے ہیں حکومت نااہل اور ملک میں جمہوریت نہیں ہے ٹوئیٹ کرنے پر لاپتہ کردیا جاتا ہے۔

ایل جی جی ریفرنس کیس کی سماعت احتساب عدالت اسلام آباد کے جج اعظم خان نے کی۔ ریفرنس میں نامزد مرکزی ملزم لیگی رہنما شاہد خاقان عباسی کی حاضری لگائی گئی، گواہوں کے پیش نہ ہونے پر کیس کی کارروائی بائیس فروری تک ملتوی کردی گئی۔

احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو میں شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ یہ پہلی حکومت ہے جو ہر ماہ بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کر رہی ہے۔ بجلی کے بعد پیڑول کی قیمتوں میں بھی اضافہ متوقع ہے۔ بجلی کے مہنگے ترین پلانٹ چلانے پر نیپرا لکھ لکھ کر تنگ آ چکا ہے۔

شاہد خاقان عباسی کے مطابق موجودہ حکومت آج ٹیلی فون کالز پر کھڑی ہے جس دن ٹیلیفون کالز بند ہونگی اسی دن تحریک عدم اعتماد اسی دن آجائے گی۔ حکومت نااہل اور ملک میں جمہوریت نہیں ہے ٹوئیٹ کرنے پر لاپتہ کردیا جاتا ہے۔

لیگی رہنما نے ایک مرتبہ پھر اپنے خلاف جاری احتساب کی عدالتی کاروائی عوام کو دکھانے کا مطالبہ دہرایا بولے چیئرمین نیب میں ہمت ہے تو کیمرے لگائیں اور عوام کو بتائیں کہ اب تک کتنی کرپشن پکڑی گئی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More