وزیراعظم شہباز شریف سے جاپانی کمپنیوں کے وفد کی ملاقات

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف نے پاکستان میں تجارت کے فروغ میں حائل رکاوٹیں دور کرنے کے عزم کا اعادہ کیاہے۔وزیراعظم نے پاکستان میں جاپانی کمپنیوں کو درپیش تمام مسائل حل کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کمیٹی قائم کردی۔

وزیراعظم شہباز شریف سے اسلام آباد میں جاپانی کمپنیوں کے وفد نے ملاقات کی ۔۔وزیراعظم شہبازشریف نے جاپانی سرمایہ کاروں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 90 کی دہائی تک پاکستان میں کئی جاپانی کمپنیاں کام کررہی تھیں۔وزیراعظم نے کہا کہ جاپان نے جسطرح پہلی جنگ عظیم کے بعد ترقی کی وہ قابل تعریف ہے۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان جاپان کے ساتھ مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کو فروغ دینے کے لیے پرعزم ہے۔اس موقع پر وزیراعظم نے جاپانی سرمایہ کاروں کو مدعو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان بھر میں جاپانی سرمایہ کاروں کے لیے بہترین مواقع موجود ہیں۔انہوں نے کہا کہ جاپان نے سیاسی وابستگی سے بالاتر ہو کر پاکستان کی مدد کی اور گزشتہ 7 برس میں 13 ارب ڈالر پاکستان کو دیئے۔انہوں نے مزید کہا کہ جاپان پاکستان کی مدد کرنے والے بڑے ممالک سمیت پاکستان کے قریبی دوستوں میں سے ایک ہے۔وزیراعظم نے دونوں ممالک کے درمیان تجارت بڑھانے کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے عزم کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ اس وقت جاپان مختلف شعبوں میں پاکستان کی معاونت کررہا ہے۔

وزیرِ اعظم شہباز شریف کی ہدایت پر پاکستان میں جاپانی کمپنیوں کو درپیش تمام مسائل حل کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر کمیٹی قائم کردی گئی ہے۔اس حوالے سے وزیراعظم نے ہدایت کی ہے کہ جاپانی کمپینوں کو درپیش تمام مسائل ایک ہفتے کے اندر حل کرکے رپورٹ پیش کی جائے اور ساتھ ہی ایکسپورٹ پراسیسنگ زونز کو ٹیکس فری کئے جانے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔

اس موقع پر جاپابی کمپنیوں نے وزیرِ اعظم شہباز شریف کے ویژن کے تحت موجودہ حکومت کی کاروبار دوست پالیسیوں پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا۔اسکے علاوہ جاپانی کمپنوں نے الیکٹرک وہیکل مینوفیکچرنگ، فوڈ پراسیسنگ، اسپیشل اکنامک زونز، ٹیکسٹائل سیکٹر، ٹیلی کمیونکیشن سیکٹر، اور آٹو پارٹس مینوفیکچرنگ کے شعبے میں سرمایہ کاری بڑھانے میں گہری دلچسپی کا اظہار کیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More