سرائیکی شاعر شاکر شجاع آبادی کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور

ملتان : سرائیکی خطے کے عظیم شاعر شاکر شجاع آبادی کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں۔ شاکر شجاع کو شدید بیماری کی حالت میں موٹر سائیکل پر بٹھا کر علاج معالجے کے لیے لیجانے والی وڈیوسوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ۔ کسمپرسی کے شکار سرائیکی شاعر کی وڈیو دیکھ کر ان کے مداحوں میں اداسی چھا گئی ہے ۔

شاکر شجاع آبادی کے بیٹے کا والد کو موٹر سائیکل پر اسپتال لے جانے کے حوالے سے کہنا ہے کہ والد کی حالت خراب ہونے پر حکیم کے پاس لےکر گیا تھا۔ اتنی آمدنی نہیں کہ والد کو ٹیکسی پر اسپتال لے جاتے۔شاعر کے بیٹے نے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومتی کاغذات میں ہمیں وظیفہ دیا جاتا ہے مگر ملتا نہیں۔

شاکر شجاع آبادی کے بڑے بیٹے ولید شاکر نےنے اپنے لیے حکومت سے سرکاری ملازمت اور شاکر شجاع آبادی کے لیے سفری سہولیات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ دوسری جانب سرائیکی خطے سمیت ملک بھر کی عوام نے حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔

وڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے پر وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے نوٹس لیتے ہوئے شاکر شجاع آبادی کے علاج معالجے کی ہدایت جاری کر دی ۔ ڈی سی او ملتان کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر ناصر شہزاد ڈوگر شاکر شجاع آبادی کی رہائش گاہ پر پہنچ گئے اور مالی معاونت اور مکمل علاج کی یقین دہانی کروائی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More