اسٹیٹ بینک آف پاکستان ترمیمی بل سینیٹ سے بھی منظور

اسلام آباد: قومی اسمبلی سے منظور کردہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان ترمیمی بل 2022 سینیٹ سے بھی منظور ہوگیا،اپوزیشن کے 42 کے مقابلے میں حکومت کے 43 ووٹ نکلے بل کی منظوری پر اپوزیشن کا شدید احتجاج۔ سینٹ اجلاس سوموار کو ساڑھے تین تک ملتوی کردیا گیا۔

بل پر رائے شماری کے وقت اے این پی کے سینیٹرعمرفاروق کاسی ایوان سے چلے گئے۔چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے بھی بل پیش کرنے کے حق میں ووٹ دیا،جب کہ دلاور خان نے حکومت کو ووٹ دیا۔بل پر رائے شماری کے وقت سینیٹ میں قائد حزب اختلاف یوسف رضا گیلانی ایوان سے غیر حاضر رہے۔اپوزیشن کے سینیٹر مشاہد حسین سید بھی کورونا کی وجہ سے ایوان میں موجود نہیں تھے۔ بل منظور ہونے پر چیئرمین سینیٹ نے اجلاس پیرتک کیلئے ملتوی کردیا۔ بل پر رائے شماری کے وقت سینیٹ میں قائد حزب اختلاف یوسف رضا گیلانی ایوان سے غیر حاضر رہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More