بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے قانون سازی صوبائی حکومت کا اختیار ہے، عدالت عظمٰی

سپریم کورٹ میں سندھ بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کیلئے حلقہ بندی کیخلاف درخواستوں پر سماعت چیف جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیئے کہ بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے قانون سازی صوبائی حکومت کا اختیار ہے، صوبائی قانون پر عملدرآمد کے دوران کچھ سقم نظر آ رہے ہیں، عدالت صرف سقم کی نشاندہی کر سکتی ہے قانون تبدیل نہیں کر سکتی- ممبر قومی اسمبلی فہمیدہ مرزا نے عدالت کو بتایا کہ پانچ بار بدین سے منتخب ہونے کے باوجود میرا ووٹ کراچی منتقل کردیا گیا ہے-

سپریم کورٹ میں سندھ بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کیلئے حلقہ بندی کیخلاف درخواستوں پر سماعت کے دوران چیف جسٹس نے کہا صوبائی قانون پر عملدرآمد کے دوران کچھ سقم نظر آرہے ہیں. کیا الیکشن کمیشن سقم نظرانداز کرکے اپنی مرضی سے حلقہ بندیاں کرسکتا ہے؟ بعض یونین کمیٹیوں کی آبادی میں فرق سو فیصد سے بھی زیادہ ہے. جسٹس منصور علی شاہ نے کہا حلقہ بندی کا اختیار ایک شق میں الیکشن کمیشن دوسری میں حکومت کو ہے. سندھ حکومت نے قانون میں بلدیاتی اداروں کا جو ڈھانچہ بنایا الیکشن کمیشن کیسے تبدیل کرسکتا ہے.

چیف جسٹس نے کہا خیبر پختونخواہ کے قانون میں یونین کمیٹیوں کی تعداد کیلئے طریقہ کار درج ہے. وکیل ایم کیو ایم نے کہا سندھ حکومت نے کمیٹیوں کی تعداد کا کوئی طریقہ کار واضح نہیں کیا ہے. اورنگی ٹاون کی سات لاکھ آبادی پر مئیر کے لیے 7 جبکہ مومن آباد کی 4 لاکھ آبادی پر 9 ووٹ مختص ہیں. سندھ حکومت کی اس سے بڑی دھاندلی اور کیا ہو گی. سندھ بلدیاتی نمائندوں کے وکیل خالد جاوید نے کہا اسی اصول کے تحت 2015 میں سندھ حکومت کی حد بندی پر حلقہ بندیاں ہوئیں ایم کیو ایم کے میئر بنے. یہ کیس صرف مومن آباد یا کراچی کا نہیں، اس کیس سے پورے ملک کی حلقہ بندیاں متاثر ہو سکتیں ہیں.

ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سندھ نے کہا کافی حد تک خالد جاوید کے دلائل کو اپناتا ہوں تاہم کل تمام دستاویزات بھی پیش کروں گا. ممبر قومی اسمبلی فہمیدہ مرزا روسٹرم پر آئیں اور عدالت کو بتایا کہ پانچویں مرتبہ بدین سے ممبر قومی اسمبلی منتخب ہوتی آرہی ہیں, ٹھٹہ اور بدین کا بہت برا حال ہے، ٹھٹہ بدین سے منتخب ہونے کے باوجود میرا ووٹ کراچی منتقل کر دیا گیا، چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ آپ کو کل سنیں گے.کیس کی سماعت کل صبح ساڑھے گیارہ بجے تک ملتوی کردی گئی.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More