ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی کو اختیارات کی منتقلی کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

مسلم لیگ ق نے ڈپٹی اسپیکرپنجاب اسمبلی کو اختیارات کی منتقلی کا لاہور ہائیکورٹ کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا۔

سپریم کورٹ میں دائر درخواست میں مسلم لیگ ق نے موقف اپنایا کہ لاہور ہائیکورٹ نے پارلیمان کے اختیارات میں مداخلت کی آئین کے تحت پارلیمنٹ کے کام میں مداخلت نہیں کی جا سکتی، تمام ادارے اپنی آئینی حدود میں رہنے کے پابند ہیں.اسپیکر پنجاب اسمبلی نے اپنے اختیارات رولز کے تحت ڈپٹی اسپیکر کو منتقل کیے تھے۔

اسپیکر نے اپنے اختیارات واپس لیے جسے لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کیا گیا تھا۔ لاہور ہائیکورٹ نے ڈپٹی اسپیکر سے اختیارات کی واپسی کا فیصلہ کالعدم قرار دیا تھا۔مسلم لیگ ق کی جانب سے کیس کی جلد سماعت کی درخواست بھی دائر کر دی گئی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More