ہفتے کی چھٹی بحال ،مارکیٹوں کی شام سات بجے بند ش کا فیصلہ نہیں ہوسکا

اسلام آباد: وفاقی کابینہ نے ہفتے کی چھٹی بحال کرنے کی منظوری دے دی۔ تاہم مارکیٹوں کوشام سات بجے بند کرنے کے حوالے سے فیصلہ نہیں ہوسکا۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں توانائی کی بچت کا پلان پیش کردیا گیا۔ اجلاس میں بجلی کی لوڈشیڈنگ اور خاتمے سے متعلق بریفنگ دی گئی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے ہفتے کی چھٹی بحال کردی ہے۔ وفاقی کابینہ اراکین اور سرکاری افسران کیلئے 40 فیصد فیول کٹوتی کی بھی منظوری دے دی گئی ہے۔ تاہم مارکیٹوں کوشام سات بجے بند کرنے کے حوالے سے فیصلہ نہیں ہوسکا۔اس حوالے سے سب کمیٹی بنانے کا فیصلہ کیا گیا جومارکیٹوں کی 7 بجے بندش سے متعلق فیصلہ کرے گی۔

اجلاس میں وزارت توانائی کی جانب سے بجلی بچت کا8 نکاتی فارمولا پیش کیا گیا۔پلان میں تجویز دی گئی ہے کہ بجلی کی بچت کےلیے ہفتے میں 5 دن کام کیا جائے ۔ہفتے کی چھٹی کی فوری طورپر بحالی ناگزیر قرار دی گئی ہے۔ہفتے میں ایک دن گھرسے کام کرنے کی تجویزبھی پلان کا حصہ ہے۔نجی شعبہ بھی ایک دن گھرسے کام کرنے کو ترجیح دے۔بجلی بچت پلان کے مطابق سرکاری تیل کے کوٹے میں کمی کرنے کی تجویز بھی پلان میں شامل کی گئی۔

پلان میں گلیوں،شاہراہوں پرلگی لائٹس جزوی طورپرآن رکھنےکی تجویز دی گئی ہے۔مارکیٹس،شادی ہالزرات دس بجےبند کیےجائیں۔

وزارت توانائی کی جانب سےتوانائی کی بچت کیلئے بھرپورآگاہی مہم چلانے پر بھی زور دیا گیا ہے ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More