ثاقب نثارآڈیو،کمیشن بنانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق چیف جسٹس سپریم کورٹ ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو کی تحقیقات کیلئے کمیشن بنانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

اٹارنی جنرل نے آڈیو ٹیپ پرکمیشن بنانے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا آڈیواسکینڈل میں تحقیقات سےسپریم کورٹ میں سابق جج شوکت عزیزکیسں ،رانا شمیم اور نواز شریف کیس پر اثر پڑے گا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ نے سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو لیک کی تحقیقات کیلئے دائر درخواست پر سماعت کی ۔اٹارنی جنرل خالد جاوید خان اور درخواست گزار صلاح الدین ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔ درخواست گزار صلاح الدین ایڈووکیٹ نے کہا کہ عدالت نے فرانزک کمپنیوں کے نام اٹارنی جنرل سے مانگے تھے، اس پر جسٹس اطہر من اللہ نے سوال کیا کہ نہیں پہلے آپ یہ بتائیں وہ اصل آڈیو کدھر ہے، یہ معاملہ ایک زیر التوا اپیل سے متعلق ہے، ہو سکتا ہے اپیل میں انہوں نے خود یہ گراؤنڈ لی ہو۔ ایسا نہیں ہوسکتا کہ ایک کیس کی متوازی دو سماعتیں چلیں،اصل آڈیو ملنے تک دنیا کی کوئی فرانزک فرم واضح رائے نہیں دے سکتی، ہم سب احتساب کیلئے حاضر ہیں، آپ کا اس عدالت سے کوئی شکوہ ہے تو ہمیں بتائیں ۔

جسٹس اطہر من اللّٰہ نے کہا کہ آڈیو سے متعلق سپریم کورٹ کا فیصلہ بھی موجود ہے، اس فیصلے کےخلاف جا کر ہم آگے کیسے بڑھ سکتے ہیں؟ یہ سارا معاملہ ایک کیس سے متعلق ہی ہے، زیر التوا کیس سے متعلق متوازی کارروائی کیسے چلائیں یہ بتائیں۔ صلاح الدین ایڈوکیٹ نے کہا کہ یہ صرف ایک پہلو ہے کہ آڈیو شریف فیملی سے متعلق ہے، ہو سکتا ہے آڈیو کے علاوہ دیگر گراؤنڈز پر کل شریف فیملی بری ہو جائے، کل انہیں صدارتی معافی مل جائے یا کچھ بھی ہو کر کیسز ختم ہو سکتے ہیں، اس کے بعد بھی اس آڈیو کی دھند چھائی رہے گی۔

درخواست گزر نے کہا کہ عوام کے ذہن میں اس آڈیو سے متعلق سوالات برقرار رہیں گے، فرانزک کرائیں شاید رپورٹ آئے کہ آڈیو جعلی یا جوڑ جوڑ کر بنائی گئی، اگر ایسی رپورٹ آئی تو سابق چیف جسٹس اور یہ عدالت بھی بری ہو گی۔ اٹارنی جنرل نے ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو لیک کی تحقیقات کیلئے دائر درخواست کے کیس میں کہا کہ درخواست گزار وکیل کہتے ہیں اصل آڈیو موجود ہی نہیں، یہی بنیاد اس درخواست کو مسترد کر دینے کیلئے کافی ہے۔ بعد ازاں عدالت نے ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو کی تحقیقات کیلئے کمیشن بنانے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More