تازہ ترین
لڑکا بن کر شادی کرنے والا دولہا لڑکی قرار، فوجداری کارروائی کا حکم

لڑکا بن کر شادی کرنے والا دولہا لڑکی قرار، فوجداری کارروائی کا حکم

لاہور:(15 ستمبر 2020) لاہور ہائی کورٹ نے دو لڑکیوں کے شادی کیس میں مبینہ دولہا کا نام ای سی ایل میں شامل اور شناختی کارڈ بلاک کرکے فوجداری کارروائی کا حکم دے دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ راولپنڈی بینچ کے جسٹس صادق محمود خرم نے دو لڑکیوں کی مبینہ شادی کے کیس کی سماعت کی، عدالت نے دولہا علی آکاش عرف عاصمہ کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے،شناختی کارڈ بلاک کرکے اس کے خلاف فوجداری کارروائی کا حکم دیا۔

فیصلے میں دولہا علی آکاش کو بادی النظر میں دستیاب ریکارڈ کے مطابق لڑکی قرارد دیتے ہوئے عدالت نے ملزم کے دائمی وارنٹ گرفتاری بھی جاری کر دیئے۔

اس کے علاوہ عدالت نے دلہن نیہا علی کو لاہور کی این جی او کے حوالے کرنے کی درخواست مسترد کرتے کہا کہ نیہا علی جب چاہے اپنے والدین کے ساتھ جاسکتی ہے۔

Comments are closed.

Scroll To Top