بلوچستان کی صورتحال پرسیاسی لوگوں سے بات کرنی چاہیے،شیخ رشید

اسلام آباد: وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہےکہ بلوچستان کی صورتحال پرسیاسی لوگوں سے سیاسی طریقے سے بات کرنی چاہیے۔ جو ہتھیار اٹھائے اس کے ساتھ طاقت سے نمٹا جائے۔ جیسی مخالف قوت ہو اس سے ویسے ہی نمٹنا چاہیے۔ کوشش ہماری یہی ہے کہ سارے آئین اور قانون کے دائرے میں آئیں اگر کوئی ملکی سالمیت کےخلاف حملہ آور ہو تو جواب تو دینا ہوگا۔

وزیرداخلہ شیخ رشید احمد نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ پاک فوج یا سول آرمڈ فورسز کےخلاف کوئی ہوگا تو جواب دینا ہوگا، ٹی ٹی پی سے کوئی مذاکرات نہیں ہورہے، طالبان کے ساتھ ہمارے تعلقات بہت اچھے ہیں اور ان سے ہماری بات چیت بہت اچھی ہے،شیخ رشید نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان کی کوشش ہے دنیا طالبان کےلیے انسانی بنیادوں،معیشت پرمدد کرے، حکومت بھی فٹ ہے اور میں بھی فٹ ہوں۔

شیخ رشید نے کہاکہ پاک فوج اور ادارے شرپسندوں سے سختی سےنمٹیں گے،وزیرداخلہ کا کہنا تھاکہ اشرف غنی موجد نہیں لیکن ان کےچیلے، را اوربھارت موجود ہے،چیلے پاکستان کو نقصان پہنچانے کا کوئی موقع نہیں چھوڑتے، بی ایل اے کوئی اتنی بڑی فورس نہیں ہے، بی ایل اے عسکری یا سیاسی قوت سمجھنا غلط فہمی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More