تحریک انصاف کا فوری لانگ مارچ نہ کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف نے بجٹ کی وجہ سے فوری لانگ مارچ نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ احتجاج ملک بھر میں ضلعی سطح پر ہوگا۔

پی ٹی چیئرمین عمران خان کی زیر صدارت بنی گالا میں کور کمیٹی اجلاس ہوا۔ اجلاس میں بجٹ سے پہلے لانگ مارچ نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ استعفوں کی تصدیق کیلئے اسپیکر کے سامنے پیش نہ ہونے، انتخابات کے علاوہ کسی اور آپشن پر مذاکرات نہ کرنے اور پنجاب میں 20 سیٹوں پر ضمنی انتخابات میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا گیا۔ عمران خان کی گرفتاری کی صورت میں حکمت عملی پر بھی غور کیا گیا۔

عمران خان لانگ مارچ کے دس روز بعد پشاور سے اپنی رہائش گاہ بنی گالا بذریعہ سرکاری ہیلی کاپٹر پہنچے۔ بنی گالا میں کور کمیٹی اجلاس کی صدارت کی، کور کمیٹی اجلاس تین گھنٹوں سے زائد وقت تک جاری رہا۔

اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں پی ٹی آئی کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ کور کمیٹی اجلاس نے فیصلہ کیا کہ لانگ مارچ 15 جون کے بعد ہوگا۔ کوئی رکن اسمبلی استعفوں کی تصدیق کے لیے اسپیکر کے سامنے پیش نہیں ہوگا،

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ کور کمیٹی نے پنجاب میں 20 نشستوں پر ضمنی انتخابات میں حصہ لینے اور انتخابات کے علاوہ کسی آپشن پر مزاکرات نہ کرنے کا اور 25 مئی کو کارکنان پر تشدد کرنے والے پولیس افسران اور اہلکاروں کی نشاندہی کرکے ان کے خلاف مقدمات درج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ عمران خان کی ممکنہ گرفتاری کے بعد کے لائحہ عمل پر بھی غور کیا گیا۔

شاہ محمود قریشی کارکنان کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ جب بھی عمران خان کی گرفتاری کی خبر سنیں تو فوری ردعمل دیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More