مصطفیٰ کمال نے دھرنا دینےکا اعلان دیا

کراچی: پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے سندھ اسمبلی سے منظور ہونے والے نئے بلدیاتی قانون کے خلاف ریڈ زون میں دھرنا دے دیا۔

چیئرمین پی ایس پی نے کراچی میں بلدیاتی ایکٹ کے خلاف فوارہ چوک گورنر ہاؤس کے قریب احتجاجی جلسے کو دھرنے میں تبدیل کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ جب تک وزیراعلیٰ نہیں سنتے ہم یہیں بیٹھیں گے ہم وزیراعلی ہاؤس نہیں جا رہے یہیں دھرنا دیں گے۔

پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ دوہزار تیرہ اوردوہزار اکیس کا بلدیاتی قانون عوام میں محرومیاں پیدا کر رہا ہے۔ پی ایس پی ملک میں خاموش انقلاب کی بنیاد ڈالے گی۔

مصطفی کمال نے مزید کہا کہ تمام پارٹی رہنما اپنے چھوٹے بچوں کے ہمراہ یہاں پہنچ چکے ہیں۔ عوام کے آنے سے پہلے اپنے گھر والوں کو لے کر یہاں کھڑے ہیں۔ سندھ کو ماڈل صوبہ بنانا چاہتے ہیں، وزیر اعلیٰ ہاؤس سے اختیارات نکال کر گلی محلوں میں لانے ہیں۔

مصطفی کمال نے کہا کہ وزراء اعلیٰ آئین اور جمہوری روایات کو نہیں مانتے۔ آج گھروں میں بیٹھے رہنے والوں کا شمار پیپلز پارٹی کے غاضب ٹولے کے ساتھ ہوگا۔

پی ایس پی سربراہ نے مزید کہا کہ دو ہزار تیرہ اور دو ہزار اکیس کے بلدیاتی قوانین عوام میں احساس محرومی پیدا کر رہے ہیں۔ہمارا موقف اب تمام سیاسی جماعتوں کی ضرورت بن گئی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More