قومی اسمبلی اجلاس، منی بجٹ میں 150اشیاء پرسیلز ٹیکس بڑھانے کی تجویز

اسلام آباد: قومی اسمبلی میں اپوزیشن کے شدید ہنگامہ آرائی کےدوران مالیاتی ضمنی بل پیش کردیا گیا۔مِنی بجٹ میں تقریباً ایک سو پچاس اشیاء پرسیلز ٹیکس بڑھانے کی تجویز دی گئی۔

قومی اسمبلی کا اجلاس اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت شروع ہوا۔ اجلاس کے شروع ہوتے ہی حزب اختلاف کی جانب سے منی بجٹ کے خلاف احتجاج شروع کر دیا گیا۔مشیر خزانہ شوکت ترین نے مالیاتی ضمنی بل پیش کرنے کی تحریک پیش کی۔

مشیر خزانہ نے اسٹیٹ بینک سے متعلق بل کی بھی تحریک پیش کی۔ اسپیکر اسمبلی کی جانب سے اسٹیٹ بینک سے متعلق ترمیمی بل کمیٹی کو ریفر کر دیا گیا۔حزب اختلاف اراکین نے اسپیکر ڈائس کا گھیراؤ کیا اور ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ کر پھینک دیں۔اجلاس کے دوران پیپلز پارٹی اور پی ٹی آئی کی خواتین ارکان میں ہاتھا پائی بھی ہوئی۔ پیپلز پارٹی کی شگفتہ جمانی نے پی ٹی آئی کی رکن غزالہ سیفی کو تھپڑ دے مارا۔

مِنی بجٹ میں تقریباً 150 اشیاء پرسیلز ٹیکس بڑھانے کی تجویز دی گئی ہے ۔ وفاقی حکومت املاک انتظام اتھارٹی آرڈیننس 2021 میں 120 دن کی توسیع کی قرارداد بھی منظور کرلی گئی ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More