نجی کمپنیاں ڈیزل بحران کی ذمہ دار ہیں، پیٹرولیم ڈیلرز

راولپنڈی : آل پاکستان پیٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن نے ڈیزل بحران پر شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہےکہ 21 دن کا سٹاک موجود ہے تو فراہم کیا جائے۔ نجی کمپنیاں ڈیزل بحران کی ذمہ دار ہیں۔ مسئلہ فوری حل نہ ہوا تو دو روز بعد پمپ مالکان ہڑتال کرنے پر مجبور ہونگے ۔

راولپنڈی پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے سیکرٹری اطلاعات نعمان علی بٹ و دیگر عہدیداران نے کہا کہ ڈیزل کا بحران شدت اختیار کرتا جارہا ہے۔ پنجاب کے بڑے اضلاع میں بھی ڈیزل موجود نہیں ہے۔اگر اسٹاک موجود ہےتو پٹرول پمپس پر کیوں نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ الزام لگایا جارہا ہے کہ ڈیلرز نے مال روکا ہوا ہے۔آج کل گندم کا سیزن ہے۔ دس ہزار لیٹر ڈیزل دو گھنٹے میں بک جاتا ہے۔ پی ایس او کے علاوہ کسی اور کے پاس ڈیزل اسٹوریج کی جگہ نہیں ہے۔ انتظامیہ پٹرولیم ڈیلرز پر پریشر ڈال رہی ہےکہ ڈیزل نہیں بیچا جارہا۔ ایسا سلوک ناقابل برداشت ہے۔ سرکاری افسران آنکھیں کھولیں اور حقیقت دیکھیں نجی کمپنیاں بالکل بھی پراڈکٹ فراہم نہیں کر رہیں۔

پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے عہدےداروں کا کہنا تھا کہ حکومت نے کسی بھی او ایم سی کا ڈیپو چیک نہیں کیا ہے۔حکومت آج قیمت بڑھا دے کل ڈیزل بحران ختم ہو جائےگا۔موجودہ ڈیزل بحران کی ذمہ دار آئل کمپنیاں ہیں حکومت ان کیخلاف کارروائی یقینی بنائے۔ اوگرا سے روز رابطہ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن وہ وقت نہیں دے رہے۔21 دن کے ڈیزل کے ذخیرے کا بتایا جارہا ہے لیکن حقیقت میں ایسا نہیں ہے ۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More