پشاور دھماکے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار

پشاور : مسجد میں ہونے والے دھماکے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار کرلی گئی ۔ خودکش حملہ آورکالے کپڑوں میں ملبوس تھا جس نے آتے ہی پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کی جبکہ خودکش حملہ آور رکشے میں آئے تھے ۔

پشاور میں ہونے والے دھماکے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیارکرلی گئی ۔رپورٹ کے مطابق دھماکے میں 5سے 6 کلوگرام دھماکہ خیز مواد استعمال ہوا۔رپورٹ کے مطابق خودکش حملہ آورکالے کپڑوں میں ملبوس تھاجس نےپولیس

اہلکاروں پر فائرنگ کی ۔ جائے وقوعہ سے پستول کے خالی خول اور دھماکہ خیز مواد میں استعمال ہونے والے چھرے بھی ملے ہیں۔دھماکے میں دو پولیس اہلکارشہید ہوئے۔

دوسری جانب سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ خودکش حملہ آور رکشے میں آئے ۔ حملہ اوروں کی تعداد 3تھی ۔ رکشہ کوہاٹی کی طرف سے آیا۔ حملہ آور اندرون کوہاٹی میں مسجد سے دور رکشے سے اترے۔حملہ آور رکشے سے اتر کر پیدل مسجد کی جانب روانہ ہوئے ۔پولیس نے رکشہ کی تلاش شروع کر دی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More