پیپلز پارٹی پر سلیکٹڈ ہونے کا الزام عائد نہیں کیا جاسکتا، بلاول

لاہور: پیپلزپارٹی نے لاہور میں تحریک انصاف کی وکٹ گرا دی۔ندیم افضل چن نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کر لی۔چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کاکہنا ہے کہ انکا ذاتی مفاد کچھ نہیں ہے ۔ وزیراعظم کا بندوبست کیے بغیر چین سے نہیں بیٹھیں گے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری ندیم افضل چن کی رہائش گاہ گئے اور انہیں دوبارہ پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے پر مبارکباد دی۔میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئے بلاول نے کہا کہ حکومت اس وقت شدید دباؤ میں ہے۔ حکومت کو پہلے بھی

قومی اسمبلی میں شکست دی تھی اور اب بھی دیں گے۔ تحریک عدم اعتماد کےآنے سے قبل ہی عمران خان مستعفی ہوجائیں اگر وہ استعفی نہیں دیتے تو اسلام آباد پہنچ کر تحریک عدم اعتماد لے کر آئیں گے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ حکومت کے لیے تحریک عدم اعتماد بڑا امتحان ہے۔ تحریک عدم اعتماد کے وقت پتا چل جائے گا کہ کون نیوٹرل ہے اور کون نہیں۔ ہم حکومت کو ڈیڈ لائن دے رہے ہیں کہ عدم اعتماد کے ووٹ سے قبل وزیراعظم مستعفی ہوجائیں اور اسمبلیاں توڑ دیں۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ عمران خان کا کام حکمرانی کرنا اور پیپلزپارٹی کا کام اپوزیشن ہے۔کسی اور جماعت پر سلیکٹڈ کا الزام عائد کیا جاسکتا ہے لیکن پیپلز پارٹی پر نہیں۔ ساری جماعتیں صاف و شفاف الیکشن کے لیے کوششیں کررہی ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More