حکومت کی سرمایہ دارانہ پالیسز سے غریب تنزلی کا شکار ہے، رضا ربانی

اسلام آباد: پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹررضا ربانی کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے اپنے بیان میں کہا کہ 100 کارپوریشنز نے گزشتہ سال 950 ارب روپے کا ریکارڈ منافع کمایا۔ اس سے لگتا ہے کہ حکومت ملٹی نیشنلز اورسرمایہ داروں کی حمایت کرتی ہے۔ یہ ہی سبب ہے کہ محنت کش طبقہ تنزلی کا شکار ہے ۔

سابق چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ کارپوریشنز قانون کے مطابق بنیادی اجرت ادا کرنے میں ناکام ہیں۔ جنوری میں کنزیومر پرائس انڈیکس 13 فیصدپر پہنچ گیا۔ تمام اشیاء اور یوٹیلیٹیز کی قیمتوں میں اضافہ کا رجحان ہے۔

سینیٹر رضا ربانی نے کہاکہ گھریلو اشیاء ،توانائی کی قیمتوں میں 15.5 فیصد ٹرانسپورٹ کے شعبے میں 23 فیصد سے زیادہ اضافہ ہوا۔ اشیائے خور و نوش میں 14 فیصد اضافہ ہوا ہے۔متوسط ​ اور مزدور طبقہ بل ادا کرنے کہ سکت نہیں رکھتا جبکہ تنخواہ دار لوگ اپنے خاندان کا بجٹ نہیں بنا سکتے ہیں۔

پی پی رہنما نے کہاکہ حکومت اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کے لیےٹھوس اقدامات کرنے میں ناکام رہی ہے۔ شہری بچوں کو تعلیم اور ایک دن کا کھانا بھی نہیں کھلا سکتے جبکہ حکومت نے آئی ایم ایف کے حکم پر پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں اور بجلی کے نرخوں میں اضافہ کر رہی ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More