موجودہ اسمبلیاں اپنی مدت پوری کریں گی، پرویز الہی

اسلام آباد: مسلم لیگ ق کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ جس میں تحریک عدم اعتماد سے متعلق امور کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کے بعد پرویز الہی کا کہنا تھا کہ موجودہ اسمبلیاں اپنی مدت پوری کریں گی۔ اپوزیشن اتحاد میں گئے تو وزارتوں سے استعفی دیں گے۔

پاکستان مسلم لیگ ق کی اہم مشاورتی بیٹھک آج ہوئی۔ جس میں مسلم لیگ ق کے اپوزیشن اور حکومت سے ہونے والے مذاکرات سے متعلق غور کیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ مشاورت کل بھی جاری رہے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت مسلم لیگ ق کو مطمئن کرنے میں ناکام ہوگئی جس کے باعث ق لیگ کی جانب سے حکومتی اتحاد چھوڑنے کا قوی امکان ہے جس کا فیصلہ کل متوقع ہے۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہی کا کہنا تھا کہ اس بات پر اتفاق ہوگیاہے کہ موجودہ اسمبلیاں اپنی مدت پوری کریں گی۔ تحریک عدم اعتماد کے حوالے سے آئین و قانون بڑا واضح ہے۔ اسپیکر قومی اسمبلی کو اس پر عمل کرنا چاہئیے۔

پرویز الہی کا کہنا تھا کہ ہم اپنا فیصلہ کرچکے ہیں۔ اس پر اپنے ساتھیوں سے حتمی مشاورت کررہے ہیں۔ مسلم لیگ ق، ایم کیو ایم اور بلوچستان عوامی پارٹی مل کر چل رہے ہیں۔ اپوزیشن اتحاد میں گئے تو وزارتوں سے استعفی دیں گے۔ آج جہانگیر ترین گروپ کے عون چوہدری ملاقات کے لئے آئے تھے۔ اگلے دو دن میں جہانگیر ترین گروپ ہمیں اپنی حمایت کا بتائیں گے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ شہباز شریف کے ساتھ ملاقات کسی بھی وقت ہوسکتی ہے۔ موجودہ حکومت کی حمایت بارے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کو اپنی کوششیں جاری رکھنا چاہئیں۔ اس حوالے سے چوہدری شجاعت کا کہنا تھا کہ پاکستان مسلم لیگ کسی بھی کشمکش کا شکار نہیں۔ کل کے اجلاس میں حتمی فیصلے کا امکان ہے۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ق کو حکومت تاحال مطمئن نہیں کر پائی ہے۔ جبکہ مسلم لیگ ق اور حکومت میں گزشتہ روز ہونے والے مذاکرات بھی بے نتیجہ رہے۔

ذرائع ق لیگ کے مطابق سیاست میں ضد یا انا نہیں بلکہ پارلیمانی و جمہوری رویے اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔ مسلم لیگ ق کی پنجاب سمیت ملکی سیاست میں ہمیشہ سے اہم کردار رہا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More