تازہ ترین
مسلم لیگ (ن) نے بجٹ کی منظوری کو مسترد کردیا

مسلم لیگ (ن) نے بجٹ کی منظوری کو مسترد کردیا

اسلام آباد: (29 جون 2020) مسلم لیگ (ن) نے بجٹ کی منظوری کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کے بجٹ اہداف پورے نہ ہوئے تو یہ اگلے سال کی بھیانک تصویر ہوگا۔

قومی اسمبلی سے بجٹ اجلاس کی منظوری کے بعد پارلیمنٹ ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے  پارلیمانی لیڈر خواجہ آصف نے کہا کہ حکومت کے بجٹ اہداف پورے نہ ہوئے، یہ بجٹ اگلے سال کی بھیانک تصویر ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ جو منظور ہوا ہے یہ بجٹ نہیں ہے۔

رانا ثناءاللہ نے کہا کہ حکومت نے ملک کا بیڑہ غرق کردیا ہے۔ جہاں پر ملک پہلے تھا اس سے بھی پیچھے دھکیل دیا گیا ہے۔ وزیراعظم اکثریت کا اعتماد کھوچکے ہیں۔ مڈٹرم الیکشن ہی موجودہ حالات کا واحد حل ہیں۔

سینیٹر مشاہداللہ خان نے دعوٰی کیا کہ حکومت نے یہ آخری بجٹ دیا ہے۔ اگلا بجٹ یہ حکومت نہیں دے سکے گی۔ ملک کو ڈبونے میں حکمران کسی ایجنڈے پر ہیں جو کامیابی سے آگے بڑھ رہا ہے۔

سینیٹر مصدق ملک نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بجٹ اس وجہ سے منظور ہوا کہ جمہوریت ہے، اپوزیشن نے مفتقہ طور پر بجٹ کو مسترد کیا ہے۔ پیٹرولیم کا بین القوامی قیمتیں بڑھنے کا حکومتی بیان بے بنیاد ہے۔

جبکہ خرم دستگیر نے کہا کہ عمران خان اپنی اکثریت نہیں دکھا پائے۔ عمران خان کے پاس پارلیمان میں 12 نمبرز کم ہیں اور ہر آنے والا دن ان کیلئے مشکل ثابت ہوگا۔

Comments are closed.

Scroll To Top