پٹرولیم مصنوعات کی قیمت میں ہر ماہ چار روپے اضافہ کیا جائے گا، شوکت ترین

اسلام آباد: مشیر خزانہ شوکت ترین نے آئی ایم ایف سے معاہدہ طے پانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ پانچ پیشگی اقدامات کریں گے تو ایک ارب ڈالر ملیں گے۔ پٹرولیم لیوی تیس روپے فی لیٹر کرنے کیلئے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں چار روپے ماہانہ اضافہ کیا جائے گا۔

اسلام آباد میں وزیر توانائی حماد اظہر کے ہمراہ مشترکہ نیوز کانفرنس کو مشیر خزانہ شوکت ترین نے عالمی مالیاتی فنڈ سے معاہدہ طے پانے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ معاہدے کے تحت ایک ارب ڈالر ملیں گے تاہم حکومت کو پانچ شرائط پر پیشگی عملدرآمد کرنا ہو گا کچھ مالی معاملات کی منظوری کیلئے منی بجٹ لایا جائے گا،شوکت ترین نے کہا کہ پیشگی شرائط کے تحت جی ایس ٹی رعایتوں کو ختم کرنا ہو گا۔

اسٹیٹ بینک کی خود مختاری کا قانون اور کورونا وائرس کے تحت ملنے والی امداد کی آڈٹ رپورٹ فراہم کرنا ہوں گی جبکہ بجلی کا ٹیرف بڑھا دیا گیا ہے۔مشیر خزانہ کا کہنا تھا کہ رواں مالی سال پٹرولیم لیوی کا ہدف 610 ارب روپے رکھا گیا تھا اسکو کم کر کے 350 ارب روپے کر دیا گیا ہے۔

شوکت ترین کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف نے رواں مالی سال کا ٹیکس ہدف 61 ہزار ارب روپے کر دیا ہے جس کو با آسانی حاصل کر لیا جائے گا کچھ جی ایس ٹی میں اضافہ سے اور ترقیاتی بجٹ میں دو سو ارب روپے کی کٹوتی کر کے حاصل کر لیں گے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More