چیف جسٹس سے چیئرمین نیب کی تعیناتی پرمشاورت کیلئے دائر درخواست مسترد

اسلام آباد: اسلام آباد ہائیکورٹ نے چیئرمین نیب کی تعیناتی کیلئے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے مشاورت کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کردی۔

درخواست گزارکے وکیل نے مؤقف اختیار کیا کہ چیئرمین نیب کی تعیناتی کے معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد نہیں ہوا، وکیل نے کہا کہ سپریم کورٹ نے سیکشن چھ میں ترمیم کرکے چیف جسٹس کی مشاورت کا کہا، بیس سال گزرنے کے باوجود نیب آرڈیننس میں چیئرمین نیب کی تعیناتی سے متعلق شق میں ترمیم نہ کی جا سکی اس لیے وزارت قانون کو چیئرمین نیب کی تعیناتی کے طریقہ کار میں ترمیم کی ہدایت کی جائے اور چیف جسٹس کی مشاورت کے بغیر نئے چیئرمین نیب کی تعیناتی سے روکا جائے۔

دورانِ سماعت جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دیےکہ چیئرمین نیب کی تعیناتی پارلیمنٹ کا اختیار ہے اور یہ عدالت پارلیمنٹ کوہدایات نہیں دے سکتی۔

عدالت نے چیئرمین نیب کی تعیناتی کیلئے چیف جسٹس سپریم کورٹ سے مشاورت کی درخواست ناقابل سماعت قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کردیا۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More