عوام نے شر انگیز فتنے کو رد کردیا، رانا ثنا اللہ

اسلام آباد: وفاقی وزیرداخلہ رانا ثنااللہ نے کہا ہے کہ عوام نے اس شر انگیز فتنے کو رد کیا اور اس کا حصہ بننے سے انکار کیا عمران خان میں کوئی احساس شرمندگی ہے تو وہیں مارچ ختم کردیتے۔

وفاقی وزیرداخلہ رانا ثنااللہ نے وفاقی وزیراطلاعات مریم اورنگزیب کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا عمران خان نے لانگ مارچ کے نام پر فتنہ مارچ شروع کرنے کا دعویٰ کیا تھا، پہلے 20 لاکھ لوگوں کے عوامی سیلاب کے اسلام آباد کی طرف بڑھنے کا اعلان کیا، پھر 30 لاکھ تک اعلان ہوا پنجاب کے عوام کا اس فتنہ فساد مارچ کا حصہ نہ بننے پر شکریہ ادا کرتا ہوں، چند سو افراد اس کا حصہ بنے ہیں ان کے لئے دعا گو ہوں۔

وفاقی وزیرداخلہ کے مطابق خیبر پختونخوا میں دو جگہوں پر علی امین گنڈا پور اور امجد نیازی ایم این اے آگے بڑھ رہے ہیں، ان کے ساتھ بھی تین سے چار ہزار کے قریب لوگ ہیں۔ ان کے پاس ایریگیشن ڈیپارٹمنٹ کی مشینری ہے، کرینز ٹئیر گنز ہیں اور اسلحہ بھی ہے۔

وزیرداخلہ رانا ثنااللہ کاکہنا تھا کہ شہبازشریف کی حکومت سمجھتی ہے کہ سپریم کورٹ آئین کا محافظ ادارہ ہے آئین کے تحفظ کی سب سے بڑی ذمہ داری سپریم کورٹ کی ہے سپریم کورٹ جو حکم دے گی حکومت اس پر عمل کرے گی۔

وفاقی وزیرداخلہ رانا ثناللہ کا کہنا تھا بلوچستان کے عوام مبارکباد کے مستحق ہیں، بلوچستان میں کسی کو معلوم ہی نہیں کہ کوئی فتنہ فساد مارچ ہو رہا ہے سندھ کی صورتحال بھی پرامن ہےسندھ کے باسیوں نے اس فتنہ فساد مارچ کا حصہ بننے سے انکار کیا ہے۔اس وقت اگر کوئی سرگرمی ہے تو وہ صرف کے پی کے میں ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More