سیاسی انتہا پسندی کے خاتمے کے لئے عوام اور سیاسی جماعتوں کو متحد ہونا ہو گا، شہباز شریف

لاہور: وزیراعظم میاں محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ سیاسی انتہا پسندی کے خاتمے کے لئے عوام اور سیاسی جماعتوں کو متحد ہونا ہو گا۔

وزیراعظم شہباز شریف کی زیرصدارت مسلم لیگ ن کی اعلی قیادت کا اہم اجلاس پارٹی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاؤن میں ہوا۔ اجلاس میں حمزہ شہباز، مریم نواز، خواجہ سعد رفیق، رانا ثناء اللہ، سردار ایاز صادق سمیت دیگر رہنما شریک ہوئے۔

اجلاس میں ملکی موجودہ سیاسی و معاشی صورتحال پرتفصیلی گفتگو ہوئی، اجلاس میں شرکا نے بجٹ کو بہترین قرار دیتے ہوئے وزیراعظم اور ان کی معاشی ٹیم کو سراہا۔ جبکہ وزیراعلی پنجاب حمزہ شہباز نے سوموار کو پیش ہونے والے صوبائی بجٹ کے حوالے سے شرکاء کو بریفنگ دی۔

اجلاس میں شہبازشریف کا کہنا تھا کہ بجٹ عام آدمی کی مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے بنایا گیا ہے۔ عوام کی مشکلات کا احساس ہے لیکن نیک نیت سے عوامی مسائل حل کرنے کے لئے کام کر رہے ہیں، ہمارے پاس کسی کےخلاف انتقامی کارروائی کرنے کا وقت نہیں اور نہ ہی انتقامی کارروائی کریں گے، سیاسی انتہا پسندی کے خاتمے کے لئے عوام اور سیاسی جماعتوں کو متحد ہونا ہو گا۔

مسلم لیگ ن کے اہم اجلاس میں پنجاب میں آئندہ ماہ ہونے والے ضمنی انتخابات کے حوالے سے تفصیلی حکمت عملی طے کی گئی۔ اجلاس میں ضمنی انتخابات والے حلقوں میں مریم نواز کو ریلیاں اور جلسے کرنے کی ہدایت کر دی گئی۔

وزیر اعظم نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ لوڈ شیڈنگ کو کنٹرول کرنے کے لئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں اور لوڈشیڈنگ کا مقابلہ کرنے کے لئے وفاقی بجٹ میں سولر پینلز پر سیلز ٹیکس ختم کر دیا ہے۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More