وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کی سماعت کیلئے فل کورٹ بنانے کا مطالبہ

اسلام آباد: حکمراں اتحاد کا مشترکہ متفقہ اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب سے متعلق مقدمے کی سماعت کیلئے فل کورٹ بنانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ عوامی سیاسی عدم استحکام کی بھاری قیمت ادا کر رہی ہے اور عمران خان بار بار سیاست میں انتشار پیدا کر رہا ہے ۔

حکمران اتحاد کی جانب سے مشترکہ متفقہ اعلامیہ جاری کردیا گیا ، جس میں چیف جسٹس سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کا فل بینچ وزیراعلی ٰپنجاب سےمتعلق مقدمے کی سماعت کرے۔ سپریم کورٹ بارکی نظرثانی اورمتعلقہ درخواستوں کی ایک ساتھ سماعت کی جائے اور ایک ساتھ سماعت کر کے فیصلہ صادر کیا جائے، معاملات بہت اہم قومی اورسیاسی ہیں۔عدم استحکام کی قیمت عوام مہنگائی،بےروزگاری ، غربت کی صورت اداکررہےہیں۔

حکمران اتحاد کے متفقہ اعلامیے کے مطابق عمران خان بار بار سیاست میں انتشار پیدا کر رہا ہے ، انتشار کا مقصد احتساب سےبچنا، کرپشن چھپانا اورچور دروازے سےاقتدارحاصل کرنا ہے۔آئین نے مقننہ، عدلیہ اور انتظامیہ میں اختیارات کی واضح لکیر کھینچی ہوئی ہے ، اختیارات کی لکیرمتکبر آئین شکن فسطائیت کاپیکر مٹانے کی کوشش کر رہا ہے۔دراصل عمران آئین، عوام کےحق حکمرانی اور جمہوری نظام معیشت کی طرح دیوالیہ کرانا چاہتا ہے، یہ سوچ اور رویہ پاکستان کے ریاستی نظام کےلئے دیمک بن چکی ہے۔

اعلامیے میں اتفاق کیا گیا ہے کہ آئین، جمہوریت اور عوام کے حق حکمرانی پر ہر گز کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا،ہر فورم اورہر میدان میں تمام اتحادی جماعتیں مل کر آگے بڑھیں گی اور اتحادی جماعتیں فسطائیت کے سیاہ اندھیروں کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گی۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More