پی ڈی ایم کسی غلط فہمی میں نہ رہے کہ پاک فوج سے کسی کے تعلقات خراب ہوں گے، چودھری پرویز الٰہی

وزیر اعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ پی ڈی ایم غلط فہمی میں نہ رہے کہ کسی کے پاک فوج کے ساتھ تعلقات خراب ہوں گے۔ مسائل کا حل جو نکلتا ہے جنرل باجوہ کی خصوصی کاوشوں سے ہی نکلتا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک طویل تھریڈ کی ہے جس میں ان کا کہنا ہے کہ سود کے حوالے سے ہم نے قانون سازی کی ہے. جو سودی کاروبار میں ملوث پایا جاتا ہے اس کیلئے پانچ سال کی سزا رکھی ہے۔ سود پر انفرادی طور پر پابندی لگا دی گئی ہے ہر طرح کا سودی لین دین ممنوع قرار دے دیا گیا ہے۔ سود کے اوپر جو پیسہ دیا جاتا ہے وہ سختی سے مار پیٹ کر واپس لیتے ہیں، اس پر ہم نے سزائیں رکھی ہیں۔ اللہ تعالیٰ بھی فرماتا ہے کہ سود کا لین دین کرنے والے جب قیامت کے دن اٹھائے جائیں گے تو ان کے چہرے کالے ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا ختم نبوتﷺ کے حوالے سے کردار کوئی آج کا نہیں بلکہ چودھری ظہور الٰہی شہید سے لے کر آج تک اللہ کریم نے محض اپنے فضل و کرم سے ہمیں عقیدہ ختم نبوتﷺ کے دفاع اور تحفظ کی سعادت عطا فرمائی۔ ہر کتاب اور نصابی کتب میں جہاں جہاں آقا کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا نام نامی اسم گرامی آئے گا، وہاں وہاں عقیدہ ختم نبوتﷺ کا اظہار اور درود وسلام بھیجنے کا اہتمام ہوگا۔ یہ اہتمام انشاء اللہ ہمارے لیے نجات و شفاعت اور ہماری نسلوں کے ایمان اور عقیدے کے تحفظ کا ذریعہ بنے گا۔ ختم نبوتﷺ کے حوالے سے کئی قانونی سقم دور کرنے اورقانون سازی کرنے کی اللہ کریم نے ہمیں توفیق دی اور بہت سی اسلام مخالف سرگرمیوں کے سدباب کا ذریعہ بنایا. الحمدللہ ہم نکاح نامے میں ختم نبوتﷺ کا حلف نامہ شامل کرنے میں کامیاب ہوئے جس کی بدولت اب ہماری بچیوں کا مستقبل محفوظ ہے۔

وزیر اعلٰی پنجاب کا کہنا ہے کہ پی ڈی ایم غلط فہمی میں نہ رہے کہ کسی کے پاک فوج کے ساتھ تعلقات خراب ہوں گے۔ مسائل کا حل جو نکلتا ہے جنرل باجوہ کی خصوصی کاوشوں سے ہی نکلتا ہے۔فوج کے خلاف باتیں کرنے والے دین اور قوم کے دشمن ہیں۔ اس ملک کو انتشار و فساد، خانہ جنگی اور ہر قسم کے حالات سے پاک فوج اور علماء کرام نے بچا رکھا ہے۔

چودھری پرویز الٰہی نے مزید کہا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے ہمیشہ تمام مسالک کے رہنماؤں، دینی مدارس اور تمام مذہبی طبقات کی بھرپور خدمت کی ہے۔ جب تبلیغی جماعت پرسعودی عرب میں پابندی لگائی گئی اس وقت ایک وفد جس میں مولانا مفتی محمد تقی عثمانی صاحب، مولانا محمد حنیف جالندھری، رائیونڈ کی شوریٰ کے لوگ اور ہمارے ساتھی ایم پی اے حافظ عمار یاسر بھی شامل تھے، ہم جنرل قمرجاوید باجوہ سے ملے جنرل قمرجاوید باجوہ نے ذاتی دلچسپی لے کر سعودی فرمانروا سے بیٹھ کر ان کو باور کروایا کہ یہ دین کا کام کرنے والی جماعت ہے اور ان کی ذاتی دلچسپی سے یہ مسئلہ بھی حل ہوا۔جنرل باجوہ نے سعودی قیادت کے ساتھ اپنا اثر ورسوخ استعمال کرتے ہوئے اس معاملے میں بھرپور اور موثر کردار ادا کیا۔

میں نے پاکستان کے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کو بہت قریب سے دیکھا. وہ ہمیشہ اسلام اور پاکستان کے دفاع اور تحفظ کیلئے پیش پیش رہتے ہیں. اسلام کی خدمت، جمہوریت اور ملکی دفاع کے حوالے سے ان کی کاوشیں قابل تحسین ہیں.

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More