پاکستان کا افغانستان کی مدد کیلئے اقوام متحدہ کی قرارداد کا خیر مقدم

اسلام آباد: پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں افغانستان کی امداد کے لیے قرارداد کی منظوری کا خیرمقدم کیا ہے۔ترجمان دفترخارجہ کے مطابق قرارداد عالمی برادری کی افغان عوام کی مدد کے لیے فوری ردعمل کی عکاس ہے۔

پاکستان نے سلامتی کونسل میں افغانستان کی امداد کے لیے منظور کی گئی قرارداد کا خیرمقدم کیا ہے ۔ ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قرارداد کا اتفاق رائے سے منظور ہونا خوش آئند ہے ۔ثابت ہوا کہ قرارداد افغان عوام کی انسانی امداد سلامتی کونسل پابندیوں کی خلاف ورزی نہیں ہے ۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ افغان عوام کئی دہائیوں کے تنازعات کے باعث بے پناہ نقصان اٹھا چکے ہیں۔ یواین قرارداد پاکستان میں او آئی سی کے غیر معمولی وزارتی اجلاس کی منظور کردہ قرارداد کی عکاس ہے ۔پاکستان، افغانستان کی ہر ممکن تیز تر انسانی بحالی، تعمیرنو، ترقی، تکنیکی، مادی امداد کا مطالبہ کرتا ہے۔

ترجمان دفترر خارجہ عاصم افتخار نے کہا کہ اقوام متحدہ سلامتی کونسل قرارداد ضرورت مند افغان عوام کے لیے درست سمت میں مثبت قدم ہے۔او آئی سی مطالبے کے مطابق اب افغان عوام کے لیے منجمد اثاثے بحال کیے جائیں۔ہپاکستان پُرامید ہے کہ عالمی برادری افغان عوام کی دل کھول کر مدد کریں گے۔تمام ممالک ، اقوام متحدہ ایجنسیاں، تنظیمیں، عالمی مالیاتی ادارے افغان عوام کی تیز تر مدد یقینی بنائیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More