پاکستان اور بھارت کے درمیان قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ

اسلام آباد: پاکستان اور بھارت کے درمیان قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ،ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق آج حکومت پاکستان نے بھارتی ہائی کمیشن کے ساتھ پاکستان میں چھ سو اٹھائیس بھارتی قیدیوں کی فہرست شیئر کی ہے، بھارت میں دو سو بیاسی پاکستانی شہری اور تہتر ماہی گیر قید میں ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق حکومت پاکستان نے بھارتی ہائی کمیشن کے ساتھ پاکستان میں 628 ہندوستانی قیدیوں کی فہرست شیئر کی ہے، پاکستان میں بھارتی قیدیوں میں51 شہری اور 577 ماہی گیر شامل ہیں۔ بھارتی حکومت نے بھی بھارت میں 355 پاکستانی قیدیوں کی فہرست پاکستانی ہائی کمیشن کے حوالے کی ہے، بھارت میں 282 پاکستانی شہری اور 73 ماہی گیر قید میں ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق 21 مئی 2008 کو پاکستان اور بھارت کے درمیان قونصلر رسائی کے معاہدے کے تحت قیدیوں کی تفصیلات کا تبادلہ کیا گیا۔ معاہدے کے تحت دونوں ممالک کو سال میں دو بارایک دوسرے کی تحویل میں قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ کرنا ہوتا ہے۔ ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان جوہری تنصیبات اور سہولیات کی فہرست کا سالانہ تبادلہ بھی کیا گیا، پاکستان میں جوہری تنصیبات کی فہرست باضابطہ طور پر بھارتی ہائی کمیشن کے حوالے کر دی گئی ہے۔

نئی دہلی میں ہندوستانی وزارت خارجہ نے ہندوستانی جوہری تنصیبات کی فہرست پاکستانی ہائی کمیشن کے نمائندے کے حوالے کی۔ دونوں ممالک ہر سال یکم جنوری کو معاہدے کے مطابق ایک دوسرے کو اپنی جوہری تنصیبات اور سہولیات سے آگاہ کرتے ہیں۔

This website uses cookies to improve your experience. We'll assume you're ok with this, but you can opt-out if you wish. Accept Read More